Tag Archives: کرکٹ

پاکستانی کرکٹ سوگ میں ڈوب گئی ملک کا نام روشن کرنیوالے عظیم کرکٹر کا انتقال ہو گیا


لاہور : سابق قومی کرکٹر اختر سرفراز انتقال کر گئے۔ تفصیلات کے مطابق سابق قومی کرکٹر اختر سرفراز کینسر کے عارضہ میں مبتلا تھے۔

سابق کرکٹر اختر سرفراز نے چار ایک روزہ میچز میں پاکستان کی نمائندگی کی۔ان کے انتقال پر دنیائے کرکٹ کی کئی شخصیات نے دکھ کا اظہار کیا اور ان کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت بھی کیا۔

وقت نہ دینے پرشنیراناخوش


کارڈف(ویب ڈیسک) گذشتہ روز کرکٹ کپ میں پاکستان اور سری لنکا کے درمیان ہونےوالا میچ بارش کی وجہ سے منسوخ ہوا اور دونوں ٹیموں کو ایک ایک پوائنٹ دیا گیا،میچ نہ ہونے کی وجہ سے دونوں ممالک کے کرکٹ شائقین نا خوش دکھائی دیے وہیں میچ میں کمنٹری کےلئے منتخب ہونےوالے قومی ٹیم کے سابق کپتان اور مایہ ناز کرکٹر وسیم اکرم کی اہلیہ

شنیرا اکرم بھی شوہر سے ناخوش دکھائی دیں۔شنیرا اکرام شوہر سے اسوقت ناراض ہوئیں جب انہوں نے انکی کمنٹری روم میں ساتھی میزبانوں کےساتھ کرکٹ کھیلنے کی ویڈیو دیکھی،کرکٹ ورلڈ کپ کے آفیشل ٹوئٹر ہینڈل سے مختصر دوانیے کی ویڈیو میں وسیم اکرم کو دیگر کمٹیٹرز کے ساتھ کمرے میں کرکٹ کھیلتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے،ویڈیو شیئر کرتے ہوئے لکھا گیا کہ بارش کی وجہ سے میچ کی منسوخی کے باعث کمنٹیٹرز کمرے میں کھیل کر لطف اندوز ہو رہے ہیں۔یہ ویڈیو وسیم اکرم کی اہلیہ شنیرا اکرام نے دیکھی تو انہوں نے اپنے شوہر کا جھوٹ سب کے سامنے رکھ دیا۔شنیرا اکرام نے ویڈیو کو شیئر کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ” انہوں نے یہ ویڈیو دیکھنے سے قبل اپنے شوہر کو فون کیا تو انہوں نے کہا کہ وہ اس وقت بہت مصروف ہیں،سابق کرکٹر کی اہلیہ کے مطابق انہیں شوہر نے کہا کہ وہ فارغ ہوتے ہی انہیں فون کال کریں گے،شنیرا اکرام نے شوہر کی مصروفیت پر حیرانگی ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے ابھی ابھی شوہر کی کرکٹ کھیلنے کی یہ ویڈیو دیکھی ہے“۔شنیرا اکرام نے براہ راست شوہر سے ناراضگی کا اظہار نہیں کیا تاہم انکی جانب سے وسیم

اکرم کی ساتھی کمنٹیٹرز کے ساتھ کرکٹ کھیلنے کی ویڈیو شیئر کرنے کے انداز سے لگتا ہے کہ وہ شوہر کی جانب سے مناسب وقت نہ دیے جانے اور فارغ وقت میں کرکٹ کھیلے پر ان سے ناخوش دکھائی دیتی ہیں۔

افغانستان نے ملک میں بلائنڈ کرکٹ شروع کرنے کیلئے پاکستان سے مدد مانگ لی،


اسلام آباد ۔ (نیوزڈیسک) افغانستان نے ملک میں بلائنڈ کرکٹ شروع کرنے کیلئے پاکستان سے مدد مانگ لی ہے۔ اس حوالے سے افغانستان کا ایک وفد پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل کے اعلیٰ حکام سے ملاقات کیلئے رواں ماہ کے آخر میں پاکستان کا دورہ کرے گا۔ پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل (پی بی سی سی ) کے چیئرمین سید سلطان شاہ نے اے پی پی کو بتایا کہ افغانستان کے

ڈائریکٹر بلائنڈ کرکٹ ڈویلپمنٹ سمیم نے پی بی سی سی سے رابطہ کیا ہے کہ وہ افغانستان میں بلائنڈ کرکٹ شروع کرنے کے حوالے سے ان کی مدد کرے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اس حوالے سے انہیں بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ افغانستان کے کھلاڑی اور آفیشل کو پاکستان بلا کر انہیں یہاں پر تربیت کا انتظام کیا جائے گا اور انہیں سپورٹس میٹریل بھی فری آف کاسٹ فراہم کیا جائے گا۔ سید سلطان شاہ نے کہا کہ پاکستان بلائنڈ کرکٹ کونسل کے اعلیٰ حکام سے ملاقات کیلئے افغانستان کی بلائنڈ ٹیم کا ایک وفد رواں ماہ کے آخر میں پاکستان کا دورہ کرے گا اور وہ افغانستان میں بلائنڈ کرکٹ کے فروغ اور بہتری سمیت وہاں پر بلائنڈ کرکٹ شروع کرنے کے حوالے سے امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

دنیائے کرکٹ کے وہ پانچ بائولر جنہوں نے کبھی نو بال نہیں کروائی , جانتے ہیں وہ کون ہے ؟


دنیائے کرکٹ کے بہت سے منفرد اعزازات ایسے ہیں جن سے آپ واقف ہیں مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ دنیائے کرکٹ کے 5ایسے بائولر بھی ہیں جنہوں نے اپنے پورے کیرئیر کے دوران کبھی نوبال نہیں کروائی۔ نجی ٹی وی دنیا نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق ان میں پہلے نمبر پر ویسٹ انڈیز کے بائولر لانس گبس کا نام سر فہرست ہے، لارنس گبس سیدھے ہاتھ سے بائولنگ کروانے والے ویسٹ انڈین ٹیم کے سپن بائولر تھے
جنہوں نے اپنے پورے کیرئیر کے دوران کبھی نو بال نہیں کروائی۔ انہوں نے 79ٹیسٹ میچ اور 3ایک روزہ میچوں میں میچوں میں اپنے ملک کی نمائندگی کی ۔ دوسرے نمبر پر آسٹریلیا کے معروف کرکٹر اور فاسٹ بائولر ڈینس لیلی کا نام ہے ، ڈینس لیلی نے 70ٹیسٹ میچ کھیلتے ہوئے تسلسل برقرار رکھا اور کوئی نو بال نہیں کروائی۔ تیسرے نمبر پر انگلینڈ کے فاسٹ بائولر این بوتھم ہیں جنہوں نے اپنے 16سالہ کرکٹ کیرئیر میں ایک دفعہ بھی نو بال نہیں کروائی۔ چوتھے نمبر پر پاکستان کے روایتی حریف بھارت کے سابق کپتان اور فاسٹ بائولر کپل دیو ہیں ، کپل دیو نے بہت سے اعزازات کے علاوہ اپنے کیرئیر میں نو بال نہ کرنے کا اعزاز بھی اپنے نام کیا جبکہ پانچویں نمبر پر پاکستانی سیاست پر اس وقت چھائے ہوئے اور 1992ورلڈ کپ کی پاکستانی فاتح ٹیم کے کپتان عمران خان ہیں۔ عمران خان نے کیرئیر کے 88ٹیسٹ اور 175ایک روزہ میچوں میں ایک بھی نو بال نہیں کروائی۔

پاک بھارت کرکٹ سیر یز ، آئی سی سی سے اہم خبر آگئی


کراچی(نیوز ڈیسک ) آئی سی سی کے نمائندے شگدیش شیٹھی نے کہا ہے کہ پاک بھارت کرکٹ دونوں ممالک کے عوام کی خواہش ہے۔بدھ کے روز کراچی میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے آئی سی سی کے نمائندے شگدیش شیٹھی نے کہا کہ عالمی کپ ٹرافی کے ہمراہ پاکستان ٹور بہت دلچسپ رہا، شائقین کرکٹ کی کھیل سے والہانہ رغبت اور

لگائوقابل رشک ہے، کھیل محبتوں کوبڑھاتے اور فاصلوں کوکم کرتے ہیں

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے زیر اہتمام ویمنز ورلڈ ٹی ٹونٹی کپ 9 نومبر سے 24 نومبر تک ویسٹ انڈیز میں کھیلا جائے گا


دبئی (نیوزڈیسک) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے زیر اہتمام ویمنز ورلڈ ٹی ٹونٹی کپ 9 نومبر سے 24 نومبر تک ویسٹ انڈیز میں کھیلا جائے گا، میزبان ویسٹ انڈین ٹیم ایونٹ میں ٹائٹل کا دفاع کرے گی، پاکستان اور روایتی حریف بھارت کی ٹیمیں 11 نومبر کو آمنے سامنے ہونگی۔ آئی سی سی حکام کے مطابق میگا ایونٹ 9 سے 24 نومبر تک کھیلا جائے گا جس

میں دنیائے کرکٹ کی 10 ٹیمیں عالمی ٹائٹل کے حصول کیلئے ایکشن میں دکھائی دیں گی، ایونٹ میں شریک ٹیموں کو دو گروپس میں تقسیم کیا گیا ہے، گروپ اے میں دفاعی چمپئن ویسٹ انڈیز، انگلینڈ، جنوبی افریقہ،، سری لنکا اور کوالیفائر ون جبکہ گروپ بی میں پاکستان،، بھارت،، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور کوالیفائر ٹو شامل ہیں، فائنل سمیت تمام 23 میچز براہ راست نشر کئے جائیں گے اور پہلی مرتبہ ورلڈ ٹی ٹونٹی کپ میں ڈی آر ایس سسٹم بھی استعمال کیا جائیگا، ڈیرن سیمی کرکٹ گرائونڈ، سینٹ لوشیا، سر ویون رچرڈز سٹیڈیم، اینٹی گووا اور پروویڈنس اسٹیڈیم، گیانا میچز کی میزبانی کریں گے، سر ویون رچرڈز اسٹیڈیم 22 نومبر کو دونوں سیمی فائنلز اور 24 نومبر کو شیڈول فائنل کا بھی میزبانی ہو گا۔ ایونٹ کے افتتاحی میچ میں نیوزی لینڈ اور بھارت کی ویمن ٹیمیں مدمقابل ہوں گی، اسی روز پاکستانی ٹیم آسٹریلیا کے خلاف مہم کا آغاز کرے گی جبکہ ویسٹ انڈیز کا مقابلہ کوالیفائر ون سے ہو گا، پاکستان اور روایتی حریف بھارت کی ٹیمیں 11 نومبر کو مدمقابل ہوں گی۔ واضح رہے کہ صف اول کی آٹھ بہترین ٹیموں نے براہ راست ایونٹ کیلئے کوالیفائی کیا تھا جبکہ بقیہ دو

ٹیموں کو کوالیفائر مرحلہ عبور کرنا ہو گا، ویمنز ورلڈ ٹی ٹونٹی کوالیفائر ٹورنامنٹ 7 سے 14 جولائی تک ہالینڈ میں کھیلا جائے گا جس میں بنگلہ دیش،، آئرلینڈ، ہالینڈ، پاپوا نیو گنی، سکاٹ لینڈ، تھائی لینڈ،، یوگینڈا اور متحدہ عرب امارات کی ٹیمیں ورلڈ کپ تک رسائی کیلئے فائٹ کریں گی۔

مداح کو گالم گلوچ کرنا مہنگی پڑ گئی، بنگلہ دیش کرکٹر صابر رحمان کو 6 ماہ تک انٹرنیشنل کرکٹ کھیلنے پر پابندی کا سامنا


ڈھاکہ ۔ (نیوزڈیسک) بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ (بی سی بی) نے آف فیلڈ ایشوز کی بناء پر قومی کرکٹر صابر رحمان پر چھ ماہ تک انٹرنیشنل کرکٹ کھیلنے پر پابندی عائد کر دی، ان پر الزام تھا کہ انہوں نے فیس بک پر ایک مداح کو گالم گلوچ کی اور اس کے ساتھ ساتھ اسے مارنے کی دھمکی بھی دی۔ صابر رحمان کو اسی وجہ سے ایشیا کپ کیلئے اعلان کردہ سکواڈ سے

بھی باہر رکھا گیا تھا۔ ہفتہ کو بی سی بی صابر رحمان بی سی بی کی قائم کردہ ڈسپلنری کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے، سماعت کے بعد ڈسپلنری کمیٹی نے صابر رحمان پر چھ ماہ تک انٹرنیشنل کرکٹ کھیلنے پر پابندی کی سفارش کی اور ان پر پابندی کا اطلاق آج اتوار سے ہو گا۔ بی سی بی کے ڈائریکٹر اسماعیل حیدر نے کہا کہ اگر صابر رحمان نے مستقبل میں ایسی حرکت دوہرائی تو انہیں سخت سزا دی جائے گی، صابر رحمان اس سے قبل بھی آف فیلڈ ایشوز کی وجہ سے معطلی کی سزا کاٹ چکے ہیں۔ مصدق حسین بھی ڈسپلنری کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے تاہم کمیٹی نے ابھی ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی۔ مصدق کی اہلیہ نے ان پر الزام لگایا تھا کہ جہیز نہ لانے پر مصدق نے انہیں تشدد کا نشانہ بنایا اور اس معاملے کی تحقیقات جاری ہیں، تحقیقاتی رپورٹس کے بعد ہی مصدق کی قسمت کا فیصلہ کیا جائے گا۔

کرکٹ ورلڈ کپ ٹرافی 27 اگست کو دنیا کے سفر پر روانہ، پاکستان کب آئیگی


لاہور: (نیوزڈیسک) کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کی ٹرافی 27 اگست سے دنیا کے سفر پر روانہ کی جائے گی، پاکستان کے مختلف شہروں میں ٹرافی کی رونمائی 3 اکتوبر سے 13 اکتوبر تک ہو گی۔کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کی ٹرافی 27 اگست سے دنیا کا سفر کریگی جس کی رونمائی 21 ممالک میں کی جائے گی۔ میگا ایونٹ کی ٹرافی 3 اکتوبر سے 13 اکتوبر تک

پاکستان میں رہے گی، 3 تا 6 اکتوبر لاہور میں رونمائی ہو گی،6 سے 8 اکتوبر ٹرافی اسلام آباد ميں گھمائی جائے گی اور 9سے 13 اکتوبر کراچي کے شائقين ٹرافی ديکھيں گے۔ کرکٹ کی عالمی جنگ کا آغاز آئندہ سال 30 مئی سے انگلینڈ میں ہو گا۔

انگلش کرکٹ میں نئی تاریخ رقم


لندن(نیوزڈیسک) انگلینڈ میں شیفرڈ نیم کینٹ کرکٹ لیگ میں 150سال سے زائد پرانے بیکنہم کرکٹ کلب کی ٹیم صرف 18رنز پر ڈھیر ہو گئی اور میچ صرف 61منٹ کے اندر ہی تمام ہو گیا۔بیکسلے کرکٹ کلب کے خلاف بیکنہم کرکٹ کلب نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا لیکن ان کا فیصلہ اتنا تباہ کن ثابت ہو گا یہ شاید انہیں بھی معلوم نہ تھا۔ میچ شروع ہوا تو

بیکنہم کی ٹیم صرف 11.2اوورز میں 18رنز پر ڈھیر ہو گئی جو مذکورہ کلب کا 152سالہ تاریخ میں کم ترین ٹوٹل ہے اور ٹیم 50منٹ بعد فیلڈنگ کے لیے میدان میں موجود تھی۔ٹیم کی جانب سے سب سے زیادہ کامیاب بلے بازوں الیگزینڈر سین، ولیم میک ویکار اور کیلم لینوس نے 4، 4 رنز سکور کیے جب کہ 5 کھلاڑی اپنا کھاتا بھی نہ کھول سکے اور کل 21 گیندوں کا سامنا کیا۔ میچ کا سکور کارڈ میچ کا سکور کارڈ سکاٹ لینڈ کی57ون ڈے میں نمائندگی کرنے والے کیلم میک لیوڈ نے 6 اوورز میں 5رنز دے کر 6وکٹیں حاصل کیں جب کہ بقیہ 4وکٹیں جیسن بین کے حصے میں آئیں۔یہ 152سال پرانے کلب بیکنہم کی تاریخ کا سب سے کم ترین سکور ہونے کے ساتھ ساتھ سیفرڈ نیم کینٹ کرکٹ لیگ میں بھی کسی ٹیم کا اب تک سب سے کم سکور ہے۔اس سے قبل ہارویل کرکٹ کلب کی ٹیم 2010ءمیں بلیک ہیتھ کرکٹ کلب کے خلاف289رنز کے ہدف کے تعاقب میں محض 21رنز پر ڈھیر ہوگئی تھی ،بلیک ہیتھ کرکٹ کلب کی جانب سے روئیل براتھ ویٹ نے8شکار کیے تھے ۔ بیکسلے کرکٹ کلب کو کم ترین ہدف کے تعاقب میں حسب توقع کوئی مشکل پیش نہ آئی اور انہوں نے صرف

12منٹ میں 3.3اوورز میں ہدف تک رسائی حاصل کر کے 10وکٹ سے کامیابی حاصل کر لی۔بیکسلے کرکٹ کلب کے اوپنر ایڈن گرگز اور کرسٹوفر لاس بالترتیب 9گیندوں پر3چوکوں کی مدد سے 12اور 12گیندوں پر1چوکے کی مدد سے 4رنز بناکر ناقابل شکست رہے جب کہ 6رنز ایکسٹرز کی شکل میں ملے۔

میچ کا سکور کارڈ

کرکٹ کے میدان سے ایسی دھماکے دار خبر جان کر ہر پاکستانی کا دل خوش ہوجائیگا


اسلام آباد(نیوز ڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کو چیمپینز ٹرافی کا فاتح بنے آج ایک سال مکمل ہو گیا، گزشتہ 18 جون 2017ءکو پاکستان نے چیمپینز ٹرافی کے فائنل میں 180 رنز سے شکست دے کر بھارتیوں کا غرور خاک میں ملایا تھا۔پاکستان نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 4 وکٹوں کے نقصان پر 338 رنز بنائے جس میں فخر زمان کی شاندار سنچری بھی شامل تھی۔

اظہر علی، بابر اعظم اور محمد حفیظ نے بھی عمدہ بلے بازی کرتے ہوئے گرا?نڈ کے چاروں طرف سٹروک کھیلے اور بھارت کو پہاڑ جیسا ہدف دینے میں اہم کردار ادا کیا۔بڑی بڑی باتیں کرنے والے بھارتی کھلاڑی اتنا بڑا ہدف دیکھ کر ہی گھبرا گئے اور بھارتی بیٹنگ لائن محمد عامر، حسن علی اور شاداب خان کی طوفانی باو¿ لنگ کا سامنا نہ کر سکی۔ محمد عامر نے روہت شرما اور ویرات کوہلی جیسے بڑے ناموں کو پویلین کی راہ دکھائی اور پھر شیکھر دھون کو بھی قابو کیا۔ہردیک پانڈیا واحد بھارتی کھلاڑی تھے جنہوں نے کچھ مزاحمت دکھائی لیکن وہ بھی زیادہ دیر کریز پر ٹھہر نہ سکے اور پوری بھارتی ٹیم 158 رنز پر ڈھیر ہو گئے۔ چیمپینز ٹرافی کی سالگرہ کے موقع پر پاکستانیوں جانب سے ایک مرتبہ پھر وہی جوش و جذبہ دکھایا جا رہا ہے جو 18 جون 2017ءکو تھا اور سوشل میڈیا پر خوب جشن منانے کا سلسلہ جاری ہے۔