Tag Archives: واٹس ایپ

واٹس ایپ کی بڑی خامی ہیکرز کے ہاتھ لگ گئی


سان فرانسسکو: واٹس ایپ استعمال کرنے والے ہوشیار ہو جائیں ! ہیکرز نے ایک ایسا وائرس پھیلادیا ہے جو آپ کے واٹس ایپ کو اپنی مرضی سے استعمال کر تاہے اور میسج بھیجنا شروع کردیتا ہے اور آپ کو پتہ بھی نہیں ہوتا کہ آپ کے نام سے دوسروں کو کیا کچھ بھیجا جا رہا ہے۔ یہ میسج پرائیویٹ بات چیت کے طور پر بھی بھیجے جاسکتے ہیں اور گروپ بات

چیت میں بھی- تفصیلات کےمطابق واٹس ایپ کو ہیک کرنے والے وائرس کا انکشاف کرنے والے تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ واٹس ایپ کو جلد از جلد اس مسئلے کا حل ڈھونڈنا ہوگا کیونکہ یہ ناصرف صارفین کیلئے بڑے نقصانات کا سبب بن سکتا ہے بلکہ افواہوں اور غلط خبروں کو بڑے پیمانے پر پھیلانے کیلئے بھی اسے استعمال کیا جاسکتا ہے۔جب کہ واٹس ایپ کا کہنا ہے کہ کمپنی کو اس مسئلے کا علم ہوچکا ہے لیکن چونکہ اس مسئلے سے ایپ کا مرکزی ڈیزائن متاثر ہے لہٰذا فوری طور پر اس کا کوئی حل سامنے نہیں آ رہا۔ سائبر سکیورٹی ماہرین بھی اس بات سے اتفاق کر رہے ہیں کہ ایپ کے ”انکرپشن ایلگوردم“ میں موجود خامی بہت پیچیدہ ہے اور اس کا حل جلد ممکن نہیں ہو سکے گا۔

واٹس ایپ میں کیا تبدیلی کر دی گئی ہے!! یوزرزکیلئے بڑی خبر آگئی


اسلام آباد(نیوز ڈیسک)مقبول ترین میسجنگ ایپ واٹس ایپ پر ویڈیو کال کی سہولت اس سے قبل صرف دو صارفین کے درمیان محدود تھی لیکن اب اس میں گروپ ویڈیو کال کا فیچر بھی دستیاب کردیا گیا ہے۔ یوں تو واٹس ایپ ویڈیو کال فیچر 2016 میں متعارف کیا گیا تھا، مگر اس میں گروپ ویڈیو کال کی سہولت موجود نہیں تھی، لیکن اب واٹس ایپ کمپنی کی جانب

سے اس مشکل کو بھی حل کرلیا گیا ہے۔ واٹس ایپ کمپنی کے مطابق گزشتہ روز سے گروپ ویڈیو کال کا فیچر متعارف کردیا ہے جس کے تحت بیک وقت چار صارفین ایک ساتھ ویڈیو کال پر بات چیت کرسکتے ہیں۔ اس فیچر کی مدد سے صارف جہاں اور جس وقت چاہے با آسانی اپنے دوستوں سے ویڈیو کال کرسکے گا۔ گروپ ویڈیو کال کرنے کے لیے ویڈیو کال کے آپشن میں جانا ہوگا اور اوپر دائیں جانب دیئے گئے add participant کے آپشن پر کلک کرنا ہوگا جس میں صارف اپنے تین دوستوں کو کال ملا کر بات کرسکتا ہے۔ کمپنی کی جانب سے اس فیچر کو اینڈرائیڈ اور آئی او ایس صارفین کے لیے جاری کردیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ گروپ ویڈیو کال کی سہولت فیس بک میں بھی موجود ہے جس میں بیک وقت 50 صارفین سے ویڈیو کال ہوسکتی ہے جب کہ اسنیپ چیٹ میں 16 صارفین سے ایک ہی وقت میں ویڈیو چیٹ ہوسکتی ہے۔

واٹس ایپ نے صارفین کے لیے ویڈیو کال کی سہولت متعارف کروا دی


لاہور (نیوزڈیسک) : واٹس ایپ نے اپنے صارفین کے لیے ویڈیو کال کی سہولت متعارف کروا دی۔ واٹس ایپ کو دنیا کی مقبول ترین چیٹنگ ایپ ہونے کا اعزاز حاصل ہے۔واٹس ایپ انتظامیہ ایپ کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ رکھنے کے لیے نت نئی تبدیلیاں کرتی رہتی ہے۔ ان تبدیلیوں کو عموما صارفین کی جانب سے بہت پسند بھی کیا جاتا ہے۔واٹس ایپ کی جانب

سے متعارف کروائی جانے والی سہولتوں کے باعث اب اس کا استعمال مزید آسان ہو چکا ہے۔ کچھ عرصہ قبل گروپ چیٹ میں نئے فیچرز شامل کرکے صارفین کو مزید سہولت فراہم کردی گئی تھی۔گروپ ایڈمن کے اختیارات بھی پہلے سے مضبوط کردیئے گئے ہیں، یعنی اب کوئی بھی گروپ ممبر ایڈمن کی اجازت کے بغیر گروپ آئیکون تبدیل نہیں کرسکے گا اور نہ ہی سبجیکٹ ایڈمن کی اجازت کے بغیر تبدیل کیا جاسکے گا۔ اس سے پہلے واٹس ایپ پر صرف دو لوگ ویڈیو کال کر سکتے ہیں۔2016ء میں واٹس ایپ نے گروپ ویڈیو کال کا فیچر متعارف کروایا تھا۔لیکن یہ سہولت موجود نہیں تھی،تاہم اب واٹس ایپ کمپنی کی جانب سے اس مشکل کو حل کر دیا گیا ہے۔واٹس ایپ کمپنی کے مطابق گزشتہ روز سے گروپ ویڈیو کال کا فیچر متعارف کردیا ہے جس کے تحت بیک وقت چار صارفین ایک ساتھ ویڈیو کال پر بات چیت کرسکتے ہیں۔ کمپنی کی جانب سے اس فیچر کو اینڈرائیڈ اور آئی او ایس صارفین کے لیے جاری کردیا گیا ہے۔واٹس ایپ کی جانب سے ویڈیو کال کی سہولت دینے پر واٹس ایپ صارفین نے بھی خوشی کااظہار کیا ہے۔اور کہا کہ وہ بھی باقی ایپس کی طرح واٹس ایپ پر

ویڈیو کال کی سہولت کا انتظار کر رہے تھے۔جو کہ اب انہیں مہیا کر دی گئی ہے۔

الیکشن سے قبل واٹس ایپ نے پاکستانی صارفین کیلئے خصوصی ہدایات جاری کردیں ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی


اسلام آباد(نیوز ڈیسک)الیکشن سے قبل واٹس ایپ نے پاکستانی صارفین کیلئے خصوصی ہدایات جاری کردیں ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئیپاکستان میں انتخابات سے چند دن قبل مقبول ترین میسجنگ اپلیکشن واٹس ایپ نے ‘جعلی اطلاعات کو پھیلنے کی روک تھام’ کے لیے عوامی شعور اجاگر کرنے کے لیے مہم شروع کی ہے۔اس مہم کے لیے واٹس ایپ کی جانب سے

ملک کے اہم اخبارات میں پورے صفحے کا اشتہار شائع کرایا گیا ہے جن میں ایسے اقدامات بتائے گئے ہیں، جن کی مدد سے صارفین گروپس میں گردش کرنے والی جعلی خبروں کو شناخت کرسکتے ہیں۔فیس بک کی زیرملکیت اس ایپ کے دنیا بھر میں صارفین کی تعداد ڈیڑھ ارب سے زائد ہے جبکہ روزانہ 60 ارب پیغامات اس پر روزانہ بھیجے جاتے ہیں۔پاکستان میں انتخابات کے دوران سیاسی تناؤ اور دیگر مسائل کے حوالے سے واٹس ایپ کی جانب یہ اشتہار شائع کرایا گیا، جس میں 10 آسان اقدامات بتائے گئے ہیں جو صارفین کو یہ فیصلہ کرنے میں مدد دیں گے کہ ان کے پاس آنے والی اطلاعات کس حد تک درست ہیں، جو کہ درج ذیل ہیں۔جب ایک میسج فارورڈ ہو تو اسے مدنظر رکھیں:رواں ہفتے کے دوران ہم نے ایک نیا فیچر متعارف کرایا جو کہ یہ جاننے میں مدد دیتا ہے کہ کونسا میسج فارورڈ کیا گیا، تو جب یہ واضح نہ ہو کہ اصل میسج کس نے لکھا تو حقائق کی دوبارہ جانچ پڑتال کریں۔جو معلومات اپ سیٹ کرے اس پر سوالات اٹھائیں:اگر آپ کچھ ایسا پڑھیں جو آپ کو مشتعل یا خوفزدہ کردے، تو پوچھیں کہ اسے آپ کو ایسا محسوس کرنے کے لیے شیئر کیا گیا؟ اگر اس کا جواب ہاں ہو،

تو اسے دوبارہ شیئر کرنے سے قبل ضرور سوچیںسنسنی خیز شہ سرخیوں سے ہوشیار رہیں:جھوٹی خبروں میں میں اکثر موٹے حروف میں تہلکہ خیز اور سنسنی پھیلانے والی سرخیاں لگائی جاتی ہیں تاکہ دیکھنے والوں کی توجہ حاصل کی جاسکے۔ اگر شہ سرخی میں ناقابل یقین دعوے کیے جارہے ہیں تو زیادہ امکان یہی ہے کہ خبر بے بنیاد ہوگی۔اطمینان کرلیں کہ پیغام کی فارمیٹنگ غیرمعمولی تو نہیں:جعلی خبریں پھیلانے والی ویب سائٹس پر اکثر عجیب فارمیٹنگ اور املا کی غلطیاں ہوتی ہیں۔ خبروں پر دھیان دیں کہ ایسی غلطیاں تو موجود نہیں۔ اگر ایسی غلطیاں نظر آئیں تو سمجھ لیں کہ خبر میں کوئی گڑبڑ ہوسکتی ہے۔تصاویر کو بغور جانچیے:جھوٹی اور من گھڑت خبروں کےالیکشن سے قبل واٹس ایپ نے پاکستانی صارفین کیلئے خصوصی ہدایات جاری کردیں ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئیساتھ اکثر جعلی تصاویر اور ویڈیوز کا استعمال کیا جاتا ہے۔ بعض اوقات اصل تصاویر کو غلط جگہ یا غلط سیاق و سباق کے ساتھ استعمال کیا جاتا ہے۔ ایسی تصاویر کی حقیقت اور ان کا ذریعہ جاننے کے لیے انہیں سرچ کیا جاسکتا ہے۔لنک کو بھی ضرور چیک کریں:قابل اعتبار ویب سائٹس سے ملتے جلتے ناموں والی ویب سائٹس زیادہ تر قابل اعتبار نہیں ہوتیں۔ کئی جھوٹی خبریں پھیلانے والی سائٹس، قابل اعتبار اداروں کے ناموں کو معمولی ناموں کے ساتھ استعمال کرتی ہیں۔ اگر ایسی کوئی خبر آپ کی نظر سے گزرے تو اصل سائٹ پر جاکر دیکھیں کہ ویب سائٹ کا لنک وہی ہے یا اس کی نقل۔دیگر نیوز ویب سائٹس یا ایپس کو بھی اس وقت دیکھیں جب کسی خبر کو کہیں رپورٹ کیا گیا ہو۔ جب ایک خبر متعدد جگہوں پر رپورٹ کیا گیا ہو، تو اس کے درست ہونے کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔

متحدہ امارات، واٹس ایپ پر کسی کو گالی دینے کی سزا ملک سے بیدخلی


دبئی۔ (نیوزڈیسک) متحدہ عرب امارات کی وفاقی عدالت نے کہا ہے کہ واٹس ایپ پر کسی کو گالی دینے یا برا بھلا کہنے کی سزا ملک سے بے دخلی ہے۔ العریبیہ نیوز کے مطابق فیڈرل عدالت نے واٹس ایپ کے ذریعہ پیش کی جانے والے دلائل کوصحیح مان کر ایک خاتون کو ملک سے بیدخل کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس نے کسی دوسری خاتون کو واٹس ایپ کے ذریعہ

گالی دی تھی۔ عدالت نے کہا ہے کہ واٹس ایپ سمیت سوشل میڈیا کے دیگر ذرائع سے کئے جانے والے جرائم سائبر کرائم میں شامل ہوتے ہیں۔

اگر آپ بھی روزانہ واٹس ایپ استعمال کرتے ہیں ، تو یہ خبر ضرور پڑھ لیں ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی


کیلی فورنیا(نیوز ڈیسک) مقبول ترین میسنجر واٹس ایپ نے افواہوں اور جھوٹی خبروں کو روکنے کیلئے نئے فیچر کی آزمائش شروع کردی ہے۔واٹس ایپ بیٹا انفو کی رپورٹ کے مطابق یہ فیچر صارفین کو گروپ میں فارورڈ کی گئی کسی بھی جعلی خبر سے خبردار کرے گا۔رپورٹ کے مطابق جب بھی کسی صارف کو واٹس ایپ پر کسی ویب سائٹ کا لنک بھیجا

جائے گا تو ایپلی کیشن خود کار طور پر اس لنک کے بیک گراو¿ نڈ کو چیک کرے گی اور کچھ مشتبہ محسوس ہونے پر صارف کو الرٹ کرے گی۔جس کے بعد ایسے میسج پر ایک سرخ لیبل کا اضافہ کیا جائے گا جو اس کے مشتبہ ہونے کا اشارہ ہوگا۔رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ یہ فیچر مستقبل قریب میں بہت جلد دنیا بھر میں متعارف کرائے جانے کا امکان ہے۔

واٹس ایپ نے اپنی سروس بند کرنے کا اعلان کردیا۔ ۔ پاکستانی وجہ بھی جان لیں


کیلی فورنیا: پیغام رسانی کی سب سے بڑی موبائل ایپلیکشن واٹس ایپ نے پرانے آپریٹنگ سسٹم پر اپنی سروس نہ دینے کی حتمی تاریخ کا اعلان کردیا۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق واٹس ایپ انتظامیہ نے اعلان کیا ہے کہ یکم فروری 2020 سے اینڈرائیڈ کے پرانے ورژن پر اُن کی ایپلیکشن دستیاب نہیں ہو گی اس کے علاوہ آئی فون آئی او ایس اور ونڈوز

فون کے پرانے ورژنز پر بھی واٹس ایپ نہیں چلایا جاسکے گا۔ انتظامیہ کے مطابق نوکیا ایس 40 اور آئی فون پر چلنے والے آئی او ایس 7 یا اس سے پرانے سسٹم والی ڈیوائسز جبکہ اینڈرائیڈ کے 2.3.7 پر واٹس ایپ نہیں چلایا جاسکے گا۔ رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں واٹس ایپ مقبول ترین ایپلیکشن ہے جس کے صارفین کی تعداد تقریباً 50 کروڑ کے لگ بھگ ہے اور دن بہ دن اس کو استعمال کرنے والے لوگوں میں اضافہ ہورہا ہے دوسری طرف گوگل کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق دنیا بھر میں 60 لاکھ سے زائد صارفین پرانے آپریٹنگ سسٹم والے موبائل، ٹیبلیٹ یا دیگر ڈیوائسز پر ایپ استعمال کرتے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ برس دسمبر میں انتظامیہ نے اعلان کیا تھا کہ آئندہ سال سے بلیک بیری، ونڈوز 8 اور نوکیا ایس 40 سمیت کئی فونز پر واٹس ایپ نہیں چل سکے گا۔ واٹس ایپ انتظامیہ کا کہنا تھا کہ مذکورہ موبائل سیٹس کے ساتھ کئی فیچرز میں جاری کام بند کردیا جائے گا جس کے باعث 2018 سے واٹس ایپ ان موبائل فونز پر دستیاب نہیں ہوگا۔ خیال رہے واٹس ایپ کو 138 ممالک میں ایک بلین سے زیادہ لوگ استعمال کر رہے ہیں اور اسے

سماجی رابطے کی صف اول کی موبائل ایپلیکیشن سمجھا جاتا ہے۔ واٹس ایپ کے ذریعے نہ صرف تحریری پیغامات بلکہ آڈیو اور ویڈیو کالز سہولت بھی ہے جس کے ذریعے تصاویر، آڈیو اور ویڈیو کے ساتھ ساتھ مختلف فائلز بھی بھیج جا سکتی ہے۔ یاد رہے کہ واٹس ایپ کے مالک مارک زکر برگ نے سال 2017 کی رپورٹ جاری کی جس کے مطابق دنیا بھر میں ایپلیکشن استعمال کرنے والے صارفین کی تعداد ڈیڑھ ارب سے تجاوز کرچکی اور یومیہ 60 ارب سے زائد صارفین ایک دوسرے کو میسجز کرتے ہیں۔

واٹس ایپ میں گروپ ویڈیو اور آڈیو کالز کے فیچر متعارف


کیلفورنیا: واٹس ایپ میں گروپ ویڈیو اور آڈیو کالز کے فیچر متعارفواٹس ایپ نے اپنے صارفین کی پرزور فرمائش پر دو انتہائی اہم فیچرز لانچ کردیئے ہیں جن کے ذریعے آپ دو سے زائد افراد ویڈیو اور آڈیو گروپ کال کرسکیں گے۔اب اس وقت بھی یہ فیچر استعمال کرسکتے ہیں۔ واضح رہے کہ بی ٹا ٹیسٹ کے لیے ایک نیا واٹس ایپ ورژن 2.18.189 پیش

کیا گیا ہے جبکہ وائس کال کا نیا ورژن v2.18.192 ہے۔ اس کا اصل ورژن بعد میں آئے گا اور ابھی ٹیسٹ کے لیے بی ٹا ورژن گوگل پلے اسٹور پر ریلیز کیا گیا ہے۔ جبکہ ونڈوز فون کے لیے چند دنوں میں نیا ورژن پیش کیا جائے گا۔اس وقت بی ٹا ورژن سے ایک وقت میں چار صارفین گروپ ویڈیو اور آڈیو کال کرسکتے ہیں ۔ کال شروع کرنے والا شخص مزید تین دوستوں کو شامل کرسکتا ہے۔واٹس ایپ گروپ کال واٹس ایپ گروپ کال آزمانے سے پہلے اس کا ورژن اپ ڈیٹ کیجئے۔ اس کے بعد کال ملایئے اور اوپر کی جانب سیدھے ہاتھ پر Add participant آئکن پر کلک کیجئے اور ایک دوست کو کال میں لایئے جبکہ تیسرا اور چوتھا دوست اسی طرح ایڈ کیجئے۔ اب نہ صرف آپ تمام دوستوں کے اکاؤنٹ کی تصاویر دیکھ سکیں گے بلکہ ان سے بات بھی کرسکتے ہیں۔ جلد ہی اس فیچر کے لیے اسٹیکر کا اضافہ بھی کیا جائے گا۔واٹس ایپ میں گروپ ویڈیو اور آڈیو کالز کے فیچر متعارف

امارات،واٹس ایپ پر فیک اور غیر قانونی پیغامات پر 10لاکھ درہم جرمانے کا قانون منظور


عجمان(نیوزڈیسک) متحدہ عرب مارات نے واٹس ایپ پر فیک اور غیر قانونی پیغامات پر 10لاکھ درہم جرمانے کا قانون منظور کر لیا،عجمان پولیس نے آگاہی مہم کا آغاز کر دیا ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق متحدہ عرب مارات نے واٹس ایپ پر فیک اور غیر قانونی پیغامات پر 10لاکھ درہم جرمانے کا قانون منظور کر لیا،عجمان پولیس نے آگاہی مہم کا آغاز کر دیا ۔ اگر

آپ کو فون کال یا واٹس ایپ پیغام کے ذریعے یہ بتایا جائے کہ آپ نے متحدہ عرب امارات میں کوئی انعام جیتا ہے یا روزگار کو کوئی موقع حاصل کر لیا ہے تو غالبا اس سوال کا جواب مثبت ہی ہو گا۔ حالیہ عرصے میں امارات کے اندر اس طرح کے پیغامات کی بھرمار ہو گئی ہے۔ اس رجحان نے عجمان کی پولیس کو اس بارے میں آگاہی مہم شروع کرنے پر مجبور کر دیا۔ اماراتی اخبار خلیج ٹائمز کے مطابق پولیس نے مقیم افراد کو مذکورہ اعلانات اور دھوکہ و فریب پر مبنی ان پیغامات سے خبردار کیا ہے۔ پولیس کے مطابق یہ سرگرمیاں غیر قانونی ہیں جس پر ایک سال سے تین سالوں کی جیل اور 2.5 لاکھ سے 10 لاکھ درہم کا جرمانہ ہو سکتا ہے۔اکثر و بیشتر یہ جعل ساز خود کو فون کا یا واٹس ایپ پیغام کے ذریعے کسی کمپنی کا ملازم بتاتے ہیں۔ اس کے بعد لوگوں کو کسی ٹیلی کمیونی کیشن کمپنی یا عوام سوپر مارکیٹس کی دکانوں کی جانب سے گرینڈ پرائز جیتنے پر مبارک باد پیش رکتے ہیں۔ یا پھر یہ دھوکے باز ایک بڑے سروے کے نام پر لوگوں سے ذاتی معلومات حاصل کر لیتے ہیں مثلا صارف کی آئی ڈی، پاس ورڈ اور کریڈٹ کارڈ نمبر وغیرہ۔

ممبئی ،ْ ہائیکورٹ نے میسجنگ ایپلی کیشن واٹس ایپ پر بھیجے گئے لیگل نوٹس کو بھی قانونی طور پر کاغذی نوٹس کے برابر قرار دیدیا


ممبئی(نیوزڈیسک) بھارتی شہر ممبئی کی ہائی کورٹ نے میسجنگ ایپلی کیشن واٹس ایپ پر بھیجے گئے لیگل نوٹس کو بھی قانونی طور پر کاغذی نوٹس کے برابر قرار دے دیا۔ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ممبئی ہائی کورٹ کے جسٹس گوتم پٹیل نے ریمارکس دیئے کہ وہ واٹس ایپ پر بھیجے گئے لیگل نوٹس کو اس لیے قانونی تسلیم کریں گے کیونکہ بلیو ٹِک

(نیلے نشان) سے پیغام پڑھنے کی نشاندہی ہوجاتی ہے ۔ ممبئی ہائی کورٹ نے یہ رولنگ اسٹیٹ بینک آف انڈیا کی جانب سے کیے گئے ایک کیس پر کارروائی کے دوران دی۔واضح رہے کہ اسٹیٹ بینک آف انڈیا نے اپنے ایک کلائنٹ روہت جادھو کے بارے میں شکایت کی تھی کہ وہ کریڈٹ کارڈ ڈی فالٹر ہیں اور انہیں ایک لاکھ سے زائد کی رقم ادا کرنی ہے۔ درخواست گزار نے کہا کہ روہت جادھو نے اپنی رہائش تبدیل کرلی تھی، جس کی وجہ سے نوٹس گھر پر بھیجا نہیں گیا تاہم ان کا فون نمبر آن تھا جو ریکارڈ میں موجود تھا۔ یہی وجہ ہے کہ انہیں پی ڈی ایف فائل کی شکل میں واٹس ایپ پر قانونی نوٹس بھیجا گیا، جسے انہوں نے نہ صرف دیکھا بلکہ فائل ڈاؤن لوڈ بھی کی۔۔سماعت کے دوران ممبئی ہائی کورٹ کا کہنا تھا کہ کسی بھی قسم کی عدالتی کارروائی میں واٹس ایپ پیغامات کی شکل میں بھیجے گئے قانونی نوٹس کو کاغذی نوٹس کی حیثیت سے ہی دیکھا جائے گا۔