Tag Archives: الیکشن کمیشن آف پاکستان

عام انتخابات سے قبل ن لیگ کا بڑا نقصان ہو گیا ، الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سپریم کورٹ کے حکم پر


اسلام آبادنیو زڈیسک) عام انتخابات سے قبل ن لیگ کا بڑا نقصان ہو گیا ، الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سپریم کورٹ کے حکم پر نہال ہاشمی کو سینیٹ کی نشست سے ڈی نوٹیفائی کردیا۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کیے گئے نوٹیفکیشن کے مطابق یکم فروی کو توہین عدالت کیس میں دیئے گئے سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں نہال ہاشمی کو

ان کی سینیٹ کی نشست سے ڈی نوٹیفائی کیا جارہا ہے۔سینیٹ انتخابات سے قبل نہال ہاشمی کی نشست پر ضمنی الیکشن کرایا جائے واضح رہے کہ نہال ہاشمی کو گذشتہ روز سپریم کورٹ نے توہین عدالت کے جرم میں ایک ماہ قید اور 50 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی، جس کے بعد وہ 5 سال کے لیے نااہل ہوگئے۔نہال ہاشمی کی سزا اور نااہلی کا باعث گذشتہ برس 28 مئی کو کراچی میں کی گئی ایک تقریر بنی، جس میں انہوں نے پاناما کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی ارکان کے خلاف دھمکی آمیز لہجہ اختیار کیا تھا۔مذکورہ ویڈیو میں نہال ہاشمی کو یہ کہتے سنا گیا کہ ‘حساب لینے والے آج حاضر سروس ہیں، کل ریٹائر ہوجائیں گے اور ہم ان کا یوم حساب بنا دیں گے۔انھوں نے مزید کہا تھا، ‘اور سن لو جو حساب ہم سے لے رہے ہو، وہ تو نواز شریف کا بیٹا ہے، ہم نواز شریف کے کارکن ہیں، حساب لینے والوں! ہم تمھارا یوم حساب بنا دیں گے۔ویڈیو سامنے آنے کے بعد مسلم لیگ (ن) کی جانب سے اسے نہال ہاشمی کی ذاتی رائے قرار دیا گیا تھا اور پارٹی صدر اور سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے نہال ہاشمی سے سینیٹر شپ سے مستعفی ہونے کو کہا تھا

جبکہ ان کی پارٹی رکنیت بھی معطل کر دی گئی تھی۔دوسری جانب سپریم کورٹ نے نہال ہاشمی کے بیان کا نوٹس لیتے ہوئے انہیں توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا تھا۔گذشتہ روز سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے نہال ہاشمی کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی اور انہیں ایک ماہ قید اور 50 ہزار روپے جرمانے کی سزا سنائی، جس کے بعد وہ 5 سال کے لیے نااہل ہوگئے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے نئے الیکشن ایکٹ کے تحت کوائف جمع نہ کرانے والی 284سیاسی جماعتوں کو انتخابات میں حصہ لینے سے روک دیا ہے


اسلام آباد(نیو زڈیسک ) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے نئے الیکشن ایکٹ کے تحت کوائف جمع نہ کرانے والی 284سیاسی جماعتوں کو انتخابات میں حصہ لینے سے روک دیا ہے ،الیکشن کمیشن کی فہرست سے نکلنے والی سیاسی جماعتوں میں ایم کیو ایم ،جمعیت علماء اسلام ،متحدہ مجلس عمل،نیشنل پارٹی،مسلم لیگ فنکشنل،پیپلز پارٹی پیٹریاٹ سمیت

اہم جماعتیں اگلے عام انتخابات سے آوٹ جبکہ مسلم لیگ ن ،تحریک انصاف ،پیپلز پارٹی ،جماعت اسلامی ،عوامی نیشنل پارٹی ،پشتونخوا ملی عوامی پارٹی ،پاکستان عوامی مسلم لیگ سمیت درجنوں جماعتوں کے مابین مقابلہ ہوگا ،فہرست سے خارج ہونے والی سیاسی جماعتیں آنے والی کسی بھی ضمنی یا جنرل الیکشن میں حصہ نہیں لیں سکیں گی ، متاثرہ سیاسی جماعتوں کو 30دنوں کے اندر اندر سپریم کورٹ میں اپیل کرنے کا حق حاصل ہے ۔الیکشن کمیشن آف پاکستان نے الیکشن ایکٹ 2017کے تحت مطلوبہ کوائف جمع کرانے میں ناکام رہنے والی 284سیاسی جماعتوں کو الیکشن لڑنے کیلئے اہل سیاسی جماعتوں کی فہرست سے خارج کر دیا ہے اس سلسلے میں کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹیفیکیشن کے مطابق الیکشن کمیشن نے کمیشن کے پاس رجسٹرڈ تمام سیاسی جماعتوں کو ہدایت کی تھی کہ نئے الیکشن ایکٹ کے تحت اپنے2ہزار کارکنوں کی فہرست جس میں ان کے شناختی کارڈ نمبر موجود ہوں فراہم کریں اور سیاسی جماعت کی رجسٹریشن فیس مبلغ2لاکھ روپے 2دسمبر تک جمع کرادیں مگر الیکشن کمیشن کے احکامات پر محض چند سیاسی جماعتوں نے عمل درآمد کیا اور دیگر سیاسی جماعتوں نے اس کو نظر انداز کر دیا ہے جس پر

الیکشن کمیشن نے الیکشن ایکٹ کے سیکشن 202کی شق 5کے تحت مطلوبہ کوائف جمع نہ کرانے والی سیاسی جماعتوں کو اپنی فہرست سے خارج (ڈی لسٹ) کر دیا ہے ان سیاسی جماعتوںمیں ایم کیو ایم پاکستان ،متحدہ مجلس عمل،نیشنل پارٹی ،پاکستان مسلم لیگ فنکشنل،پیپلز پارٹی پیٹریاٹ،سنی تحریک ،جمعیت علماء اسلام ،اعلیٰ کلام اللہ فرمان

رسول پارٹی ،عام آدمی پارٹی آف پاکستان ،عام آدمی تحریک پاکستان ، عام عوام پارٹی ،عام انسان مومنٹ ،عام پاکستانی اتحاد ،آپ جناب سرکار پارٹی ،افغان نیشنل پارٹی ،آل متحدہ بلوچ قومی مومنٹ ،آل پاکستان کرسچن لیگ ،آل پاکستان مینارٹی آلائنس ، عوامی انقلاپ پارٹی ،عوام جمہوری پارٹی ،عوامی جہوری اتحاد پاکستان ،عوامی جسٹس پارٹی ،

بلوچستان نینشل کانگرس ،بلوچستان نیشنل موومنٹ ،کمیونسٹ پارٹی آف پاکستان ،ڈیموکریٹک پارٹی آف پاکستان ،جنرل پرویز مشرف حمایت تحریک ،غریب عوام پارٹی ،ہزار عوام اتحاد پاکستان ،اسلامی انقلاب پارٹی ،جمعیت اہل حدیث پاکستان روپڑی ،جمعیت اہل حدیث پاکستان الٰہی ،جمعیت علماء اسلام سمیع الحق گروپ ،جمعیت علمائے پاکستان نیازی گروپ ،

جمعیت علماء پاکستان نورانی گروپ ،جمعیت علماء پاکستان نفاذ شریعت گروپ ،جمعیت مشایخ پاکستان ،جنت پاکستان پارٹی ،جمعیت علماء اسلام نظریاتی گروپ ،جسٹس اینڈ ڈیویلپمنٹ پارٹی پاکستان ، مرکزی جمعیت اہلحدیث ساجد میر گروپ،مرکزی جمعیت اہلحدیث ابولخیر زبیر گروپ،ملت پارٹی ،متحدہ قبائل پارٹی ،متحدہ مسلم لیگ،متحدہ جمعیت علماء

پاکستان ،نیشنل عوامی پارٹی،نیشنل جسٹس پارٹی ،نیشنل پیپلز پارٹی ورکرز گروپ ،نظام مصطفیٰ پارٹی ،پختونخوا قومی پارٹی ،پاکستان کسان اتحاد،پاکستان مزدور کسان پارٹی ،پاکستان مزدور محاذ ،پاکستان ملت پارٹی ،پاکستان مسلم لیگ ہم خیال ،نیشنل ڈیموکریٹک پارٹی ،پاکستان علماء کونسل ،سندھ دیموکریٹک الائنس،سندھ نیشنل فرنٹ،

صوابی قومی محاذ،تحریک مساوات، شامل ہیں الیکشن کمیشن کے مطابق فہرست سے خارج ہونے والی سیاسی جماعتوں کواگلے 30دنوں میں الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا حق حاصل ہے