شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

9 نومبر تک حکومت رہے گی یا نہیں ؟ تہلکہ خیز پیشگوئی کردی گئی


گوجرانوالہ (ویب ڈیسک) امیرِ جماعتِ اسلامی پاکستان کے سرگرم سینیٹر سراج الحق کا کہنا ہے کہ کسے معلوم کہ 9 نومبر تک حکومت رہے گی یا نہیں۔ گوجرانوالہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق کر تار پور راہداری کے افتتاح سے متعلق سوال پر تبصرہ کر رہے تھے۔ تفصیلات کے مطابق امیرِ جماعتِ اسلامی نے کہا کہ یہاں راتوں رات ایسے واقعات ہو

جاتے ہیں جن کا یقین نہیں ہوتا، مسائل کا حل مذاکرات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پہل کرنا، لچک دکھانا اور مطالبات ماننا حکومت کی ذمہ داری ہے، آج حکومت خود اپنے شہر میں محصور ہو گئی ہے۔ سراج الحق نے مزید کہا کہ ملک میں معاشی بحران ہے، حکومت کو ووٹ دینے والے اور سپورٹ کرنے والوں کے ساتھ اقتدار میں لانے میں کردار ادا کرنے والے بھی پریشان ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ دھرنے کی صورت میں بہت بڑا مجمع موجود ہے، موجودہ حکومت مسلم لیگ، پیپلز پارٹی اور مشرف حکومت کا تسلسل ہے۔ دوسری جانب امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ حکومت احتساب میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے۔ لاہور سے جاری ایک بیان میں سراج الحق نے کہا کہ حکومت کے خلاف لوگوں کے احتجاج کا کریڈٹ بھی حکومت کو ہی جاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ایک ہی سال میں حکومت کی ناکامی ہر شعبہ میں ثابت ہو گئی ہے۔ امیر جماعت اسلامی نے مزید کہا کہ تاجروں، اساتذہ اور ڈاکٹروں سمیت عوامی احتجاج نے حکومت کے دل کی دھڑکن مدھم کر دی ہے۔ ان کا کہنا تھاکہ حکومت احتساب میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے اگر حکومت

احتساب کرتی تو سب سے پہلے احتساب کے شکنجے میں اس کی بغل میں بیٹھے لوگ آتے۔ سراج الحق نے یہ بھی کہاکہ احتجاج کے باعث کشمیر کا مسئلہ بھی دب گیا ہے ،حکومت کشمیر اور عوام دونوں کو بھول چکی ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس