شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

آزادی مارچ کے باوجود 31 اکتوبر کو کونسی معاشی طاقت کے سربراہ پاکستان کا دورہ کرنے والے ہیں؟


اسلام آباد (ویب ڈیسک) جمیعت علماء اسلام (ف) کے اسلام آباد کی طرف مارچ کے باوجود آئی ایم ایف کا جائزہ مشن 28 اکتوبر سے اسلام آباد کا دورہ کرے گا جہاں 6 ارب ڈالر کے ایکسٹینڈڈ فنڈ کے لئے پاکستانی حکام سے ملاقاتیں ہونگی۔ آئی ایم ایف کے حکام چودہ روز قیام کریں گے۔ پاکستانی سرکاری نے بتایا ہے کہ اعلان کردہ مارچ کی وجہ سے جائزہ مشن

وجہ سے مجوزہ شیڈول میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ، زرائع نے بتایا کہ ورلڈ بنک کے صدر بھی 31 اکتوبر سے پاکستان کا دورہ کریں گے، 10 میں 6 احداف میں پا کستانی کامیابیوں کے سلسلے میں حکام سے ملاقاتیں کریں گے، آئی ایم ایف مشن کے حکام 28 اکتوبر سے پاکستان میں دو ہفتے تک رہیں گے۔ اس سے قبل ایم ایف کے نئے سربراہ ارنسوٹو رمیز نے پاکستا کا دو روزہ دورہ کیا تھا، جس کے دوران انہوں نے کہا پاکستان سے ملاقاتوں میں نئے آئی ایم ایف پروگرام کے تناظرمیں بات چیت کی گئی۔ پاکستان کے لیے عالمی مالیاتی فنڈ کے سربراہ ارنسٹو رمیریزریگو نے دو روزہ تعارفی دورہ مکمل کیا۔ آئی ایم ایف سرابرہ نے سابق وزیر خزانہ اسد عمر، گورنر اسٹیٹ اور چیئرمین ایف بی آر سمیت دیگر سے ملاقاتیں کیں تھیں۔ اس دوران معاشی شعبے میں حالیہ پیش روفت اور نیے امکانات پر تبادلہ خیال کیا گیا تھا، پاکستان کیلئے نئے قرض پراگرام کے تناظر میں بھی بات چیت کی۔ ارنسٹو رمیرنسٹو ریگو نے وزیر توانائی، وزیر مملکت ریونیو اور سیکرٹری خزانہ سے بھی ملاقات کی۔ آئی اہم ایف نے ٹیکس آمدن بڑھانے اور مالیاتی خسارے پر قابو پانے پر روز دیا تھا جبکہ پاکستان

اور آئی ایم ایف کے مابین نئے پروگرام کے معاملے پر بات چیت کا عمل جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا اور کہا کہ عالمی مالیاتی ادارے کا وفد جلد پاکستان کا دورہ کرے گا۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس