شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

بھارتی فوج پر خوفناک بم حملہ ۔۔ فوجیوں کی بڑی تعداد نشا نہ بن گئی


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ’’کیا مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی جنگ شروع ہو چکی ‘‘ بھارتی فوج پر خوفناک بم حملہ ۔۔ فوجیوں کی بڑی تعداد نشا نہ بن گئی ۔۔۔بھارتی فورسز پر حملہ، سرینگر کے علاقے ہری سنگھ ہائی سٹریٹ میں کیے جانے والے بم حملے میں متعدد بھارتی اہلکار زخمی ہوگئے۔ کشمیر میڈیا سروس کی جانب سے فراہم کردہ سروس کے مطابق

نامعلوم افراد کی طرف سے ہفتے کے روز کو سرینگر کے علاقے ہری سنگھ ہائی سٹریٹ میں ایک دستی بم دھماکہ کیا گیا جس کے نتیجے میں کم از کم 7 افراد زخمی ہو گئے۔ بتایا جا رہا ہے کہ زخمی ہونے والے افراد بھارتی سیکورٹی اہلکار ہیں۔ واقعے کے فوراً بعد بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں نے علاقے کو محاصرے میں لیکر حملہ آوروں کی تلاش شروع کر دی۔ دوسری جانب بھارتی فوجیوں نے ضلع گاندربل میں تلاشی آپریشن ہفتہ کو مسلسل16ویں روز بھی جاری رکھا۔ فوجیوں نے نارہ ناگ، ٹرم کہل اور ضلع کے دیگر علاقوں میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی 27ستمبر کو شروع کی تھی اور یہ گزشتہ پندرہ ماہ کے دوران مقبوضہ علاقے میں کیا جانے والا سب سے طویل آپریشن ہے۔ آپریشن میں بھارتی فوج کے کمانڈوز بھی حصہ لے رہے ہیں جنہیں ہیلی کاپٹر کے ذریعے علاقے میں اتارا گیا۔ قابض فوجی آپریشن کے دوران اب تک چار کشمیری نوجوانوں کوشہید کرچکے ہیں ۔ جبکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجی محاصرہ ہفتہ کومسلسل 69ویں روز بھی جاری رہا جس کے باعث وادی کشمیر اور جموں خطے کے لوگوں کو بدستور سخت مشکلات کا

سامناہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق موبائل فون اور انٹرنیٹ سروسز کی معطلی اور پبلک ٹرانسپورٹ کی عدم دستیابی کے باعث کشمیریوں کوخوراک اور ادویات سمیت بنیادی اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامنا ہے۔ لوگوں نے بھارتی قبضے کے خلاف اپنی دکانیں اور کاروباری مراکز خاموش احتجاج کے طور پر بند کر رکھی ہیں۔ بھارتی حکومت کی طرف سے لینڈ لائن فون سروس کی بحالی جیسے نمائشی اقدامات لوگوں کی مشکلات کم کرنے میں ناکام ثابت ہوئے ہیں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس