شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

آرمی چیف کیا معاملہ لے کر نواز شریف کے پاس پہنچ گئے؟ پاکستانیوں کے لیے بڑی خبر


کراچی (نیوز ڈیساک) سینئر صحافی و کالم نگار ہارون الرشید نے دعویٰ کیا ہے کہ ن لیگ میں اختلافات تو موجود ہیں، قانون پر عمل کیا جائے گا تو ہی یہ ملک آگے کی جانب بڑھ سکے گا، ن لیگ میں بہت سے گروپ بن چکے ہیں ان میں سے ہی گروپ ایسا بھی ہی جو یہ چاہتا ہے کہ کسی طرح بھی تصادم نہ ہو، اس گروپ کے سرغنہ خواجہ آصف اور شہباز

شریف ہیں، ضروری نہیں کہ ہر مرتبہ نواز شریف ہی غلطی کریں، غلطی ملٹری سے بھی ہو سکتی ہے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے معروف صحافی ہارون الرشید کا کہنا تھا کہ چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے تعاون کی کوشش کی، کیونکہ انکا کام ہی تعاون کرنا ہے اور انہیں تعاون کرنا بھی چاہیئے تھا، آرمی چیف نے عہدہ سنبھالتے ہی میاں نواز شریف سے ملاقات کی جو اس وقت کے وزیر اعظم تھے اور شکایت کی کہ آرمی افسران ڈان لیکس کو لے کر کافی شکایتیں کر رہے ہیں، اب اس کے خلاف کوئی ایکشن لینا ہوگا، مریم نواز کو تو پہلے سے ہی نکالا جا چکا تھا، اور یہ ایک اچھا امر بھی تھا کیونکہ وہ خاتون تھیں لیکن پرویز رشید کا نام بھی موجود تھا ، ان سے سوالات ہی نہیں کیے گئے، انہیں ویسسے ہی سائیڈ لائن کر دیا گیا۔ ہارون الرشید کا کہنا تھا کہ کہ ن لیگ میں اختلافات تو موجود ہیں، قانون پر عمل کیا جائے گا تو ہی یہ ملک آگے کی جانب بڑھ سکے گا، ن لیگ میں بہت سے گروپ بن چکے ہیں ان میں سے ہی گروپ ایسا بھی ہی جو یہ چاہتا ہے کہ کسی طرح بھی تصادم نہ ہو، اس گروپ کے سرغنہ خواجہ آصف

اور شہباز شریف ہیں، ضروری نہیں کہ ہر مرتبہ نواز شریف ہی غلطی کریں، غلطی ملٹری سے بھی ہو سکتی ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس