شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

شناختی کارڈ بنوانا اب بالکل آسان ہو گیا ، نادرا نے اب تک کا شاندار اعلان کر دیا


اسلام آباد (ویب ڈیسک) نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) نے دیہی علاقوں میں قائم 200 ڈاک خانوں میں شناختی کارڈز بنانے کی سہولت مہیا کردی ہے۔ ترجمان نادرا کے مطابق پاکستان پوسٹ آفس کے ساتھ کیے گئے معاہدے کے مطابق نادرا ڈاک خانوں میں شناختی کارڈز بنانے کی سہولت کو ملک بھر میں شروع کرےگا۔ ابتدائی طور پر ملک کے

200 مختلف ڈاک خانوں میں شناختی کارڈز بنانے کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ معاہدے کے تحت ملک بھر میں جون 2017 میں تجرباتی طور پر 10 کاؤنٹرز قائم کئے گئے تھے، اس تعداد میں بتدریج اضافہ کیا گیا ہے۔ ترجمان نادرا کے مطابق عوامی سہولت کے لیے اب مزید 200 کاونٹرز پوسٹ آفسز میں قائم کیے جائیں گے۔ نادرا اور پاکستان پوسٹ کا ان سینٹرز کو دیہی اور پسماندہ علاقوں میں کھولنے کا بنیادی مقصد رجسٹریشن کے عمل کوآسان بنانا ہے۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں شاپنگ بیگز پرپابندی کے لئے درخواست پر سماعت کی گئی، چیف سیکرٹری نے شاپنگ بیگزسے متعلق قانونی مسودہ پیش کردیا،عدالت نے شاپنگ بیگزکے استعمال کےخلاف تمام درخواستیں نمٹادیں،عدالت نے کہا کہ اگر حکومتی جانب سے ٹال مٹول کیا جاتا ہے توہم سے رجوع کیا جاسکتا ہے، قانون کواسمبلی میں پیش کرنے سے پہلے سٹیک ہولڈرسے معاملات طے کریں۔ تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں شاپنگ بیگزپرپابندی کےلئے درخواست پرسماعت کی گئی، جسٹس مظاہرعلی اکبرکی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے سماعت کی،ایڈووکیٹ جنرل اورچیف

سیکرٹری پنجاب عدالت میں پیش ہوئے،چیف سیکرٹری نے شاپنگ بیگزسے متعلق قانونی مسودہ پیش کردیا،چیف سیکرٹری نے کہا کہ شاپنگ بیگزپرپابندی کیلئے انسپکٹرزبھرتی کرنےکافیصلہ کیا ہے۔ عدالت کاقانونی مسودے میں شاپنگ بیگز کی بجائے بہتر الفاظ استعمال کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ آپ ماحولیات کے قانون کے مسودے سے الفاظ لے سکتے ہیں ،عدالت نے کہا کہ آپ قانون تو لے آتے ہیں لیکن رولز 2،2 سال نہیں بناتے،اس مسودے میں بہت سی غلطیاں ہیں جو ٹھیک کریں،قانون میں صرف شاپنگ بیگ کا لفظ استعمال نہ کریں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس