شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

بریکنگ نیوز: رافیل بھی کسی کام نہ آیا ، بھارتی فضائیہ کے پلے کچھ بھی نہ چھوڑ دینے والی خبر آگئی


اسلام آباد (ویب ڈیسک) بھارت کے طیارے گرنے کے واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں۔ بھارتی فضائیہ کے کئی لڑاکا طیارے تربیتی پروازوں کے دوران گر کر تباہ ہو چکے ہیں۔گذشتہ ماہ بھی بھارتی ریاست اُتر پردیش میں طیارہ گر کر تباہ ہو گیا تھا۔ طیارہ بجلی کی تاروں میں پھنس گیا تھا جس کے باعث حادثہ پیش آیا۔ حادثے میں کسی جانی نقصان کی اطلاع موصول

نہیں ہوئی تھی۔ اس سے پہلے بھی بجلی کی تاروں میں پھنس کر ہی بھارت کا ایک ہیلی کاپٹر تباہ ہوا تھا۔ ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہونے کا واقعہ بھارتی ریاست اترکھنڈ کے ضلع اترکاشی میں پیش آیا تھا۔اس واقعہ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس کی میڈیا انچارج پروین الوک نے بتایا تھا کہ امدادی سامان لے جانے والا یہ ہیلی کاپٹر ہیریٹیج ایوی ایشن کی ملکیت تھا جسے پائلٹ راج پال اُڑا رہے تھے۔ واضح رہے کہ بھارت میں طیارے اور ہیلی کاپٹرز گرنے اور تباہ ہونے کی خبریں اکثر و بیشتر خبروں کی زینت بنی رہتی ہیں۔ جبکہ فروری میں بھی پاک فضائیہ نے ایک بھارتی مگ 21 اور ایس یو 30 جیسا جدید جنگی طیارہ بھی مار گرایا تھا۔ اب ایک رپورٹ کے مطابق بھارتی فضائیہ اس وقت ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے کیونکہ اس کے تمام مگ 27 طیارے اور روسی ساختہ مگ 21؍ طیاروں کے پانچ میں سے ایک اسکوارڈن کو آئندہ 12؍ ہفتوں میں ناقابل استعمال قرار دے دیا جائے گا۔ بھارتی فضائیہ کے اس اقدام کے نتیجے میں بھارتی فضائیہ کی سرگرم جنگ میں دشمن کو زیر کرنے صلاحیت محدود ہو جائے گی۔ دفاعی ذرائع نے میڈیا کو بتایا ہے کہ 2019ء کے

آخر تک مگ 27؍ کو مکمل طور پر فضائیہ سے خارج کر دیا جائے گا۔ یہ روسی ساختہ طیارہ بھارت نے لائسنس معاہدے کے تحت بھارت میں تیار کیا تھا۔ یہ طیارے بھارت نے 1970ء کی دہائی میں سوویت یونین سے خریدے تھے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس