شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

شہباز گل کے بعد اب جہانگیر ترین کے ساتھ کیا ہونے والا ہے ؟ وزیر اعظم کے کزن حفیظ اللہ نیازی کا تہلکہ خیز انکشاف


اسلام آباد (ویب ڈیسک) حفیظ اللہ نیازی نے کہاہے کہ شہباز گل کوبڑی محبت سے لایا گیا تھا لیکن عمران خان کی صلاحیتوں کے بارے میں دورائے نہیں ہیں، وہ ہر بندے کوٹشو پیپر سمجھتے ہیں اور استعمال کر کے پھینک دیتے ہیں ۔شہباز گل کے بعد اس وقت جہانگیر ترین کی اہمیت بھی پارٹی میں ختم ہوگئی ہے اور اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ ان کا انجام بھی

یہی ہوگا۔ ایک سال کے اندر جتنی اکھاڑ پچھاڑ کی گئی ہے اس سے لگتاہے کہ بیوقوفی اور نادانی سے حکومت کی جتنی بڑی ناکامی اس وقت ہے نہ کبھی ماضی میں تھی اورنہ کبھی مستقبل میں ہوگی ۔جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے حفیظ اللہ نیازی نے کہاہے کہ شہباز گل کے مستعفی ہونے سے ہمیں پہلی بار یہ پتہ چلاہے کہ عثمان بزدار کی واقعی پسند اور ناپسند بھی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایک ڈپٹی کمشنر بھی اگر پنجاب میں تبدیل ہوتا ہے تو وہ بھی عثمان بزدار کو واٹس اپ پر پیغام آتا ہے تو وہ یہ تبادلہ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے جتنے بندے جنہوں نے عثمان بزدار کو منتخب کیا تھا تو ان کے ذہنوں میں یہ بات آئی تھی کہ مجھے کیوں وزیر اعلیٰ نہیں بنایا گیا ؟ اس سوال کا عمران خان کوپتہ تھا اور وہ اس حوالے سے سب کوبتاتے تھے کہ عثمان بزدار پسماندہ علاقے سے ہیں اوران کے گھر میں بجلی نہیں ہے ۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ایک انگریزی نیوز ویب سائٹ نے دعویٰ کیا ہے کہ ڈاکٹر شہباز گل کی پنجاب سے چھٹی کے بعد انہیں مرکز میں اہم ذمہ داری مل سکتی ہے۔دی کرنٹ نامی انگریزی خبروں کی ویب سائٹ نے دعویٰ کیا

ہے کہ ڈاکٹر شہباز گل کی جانب سے اپنے عہدے سے استعفیٰ دیے جانے کے بعد انہیں مرکز میں لے جانے کی تیاریاں شروع کردی گئی ہیں۔ ’ افواہیں سنائی دے رہی ہیں کہ گل کو ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کی جگہ وزیر اعظم کا معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات لگایا جائے گا۔‘خیال رہے کہ آج (جمعہ کو) وزیر اعلیٰ پنجاب کے ترجمان ڈاکٹر شہباز گل نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ بعد ازاں یہ بات بھی سامنے آئی کہ انہوں نے استعفیٰ نہیں دیا بلکہ انہیں عہدے سے ہٹایا گیا ہے۔ عثمان بزدار نے عمرے کی ادائیگی کیلئے سعودی عرب روانگی سے قبل اپنے سیکرٹری کو شہباز گل کی برطرفی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کا حکم دیا تھا جس کے بارے میں علم ہوتے ہی شہباز گل نے استعفیٰ کی پیشکش کی اور مطالبہ کیا کہ انہیں باعزت طریقے سے رخصت ہونے کا موقع دیا جائے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس