شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

مودی تیار ہوجاؤ!! تمہیں سبق سکھانے کا وقت آگیا ہے: وزیراعظم


مظفرآباد(نیوز ڈیسک )وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ مودی تیار ہوجاؤ!! تمہیں سبق سکھانے کا وقت آگیا ہے، بھارت کا آزاد کشمیر میں جارحیت کا پلان ہے،مودی کو پیغام دیتا ہوں ایکشن لیں، اینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے گا۔آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کی آزادی کے دن کشمیری

بھائیوں کےساتھ ہوں، یہ جو کشمیر پر آج وقت آیاہے، کل پاکستان پر آئے گا،میں نے بی جے پی اور مودی کی اصل شکل کو دنیا کےسامنےرکھا۔وزیراعظم نے کہا کہ بھارت کے ساتھ مفادات کی کشمکش چل رہی ہے، ہمارے سامنے ایک بڑی خوفناک آئیڈیالوجی ہے، آرایس ایس کی آئیڈیالوجی ہٹلر کی آئیڈیالوجی ہے، اس آئیڈیالوجی کے پیچھے مسلمانوں سے نفرت ہے۔عمران خان نے کہا کہ قائداعظم اس آئیڈیالوجی کو سمجھ گئے تھے،پاکستان اس آئیڈیالوجی کی وجہ سے بنایاگیا،آر ایس ایس کی آئیڈیالوجی میں مسلمانوں کی ہندوستان میں جگہ کوئی جگہ نہیں، اسی آئیڈیالوجی نے مہاتما گاندھی کو قتل کیا، اسی آئیڈیالوجی کی وجہ سے مسلمانوں کا گجرات میں قتل عام کیا گیا، وہاں سے یہ آئیدیالوجی بڑھنا شروع ہوئی۔انہوں نے مزید کہا کہ گائے کے گوشت کھانے پر مسلمانوں کو مارنا بھی اسی آئیڈیالوجی کا حصہ تھا، نریندر مودی نے جو کارڈ کھیلا یہ اس آئیڈیالوجی کا آخری حصہ تھا، بار بار انہوں نے دیکھا کہ ہمیں کوئی نہیں روک رہا تو ان میں اور اعتماد آنا شروع ہوگیا۔وزیراعظم نے اپنے خطاب میں یہ بھی کہا کہ خوف ہے کہ کرفیوں اٹھے گا تو ہمیں کیا چیزیں پتہ چلیں گی، سب کو خوف

ہے کہ بھارت کیا کرنے جارہا ہے، نریندر مودی نے اسٹریٹیجک بلنڈر کردیا ہے، نریندر مودی نے اپنا آخری کارڈ کھیل دیا ہے، یہ نریندر مودی کو بہت بھاری پڑے گا، انہوں نے کشمیر کو بین الاقوامی معاملہ بنا دیا۔عمران خان کا کہنا تھا کہ میں کشمیر کی دنیا میں آواز اٹھانے والا سفیر بنوں گا، کشمیر کے خواتین کے حوالے سے بیانات کوئی بیمار ذہن ہی کرسکتا ہے، اس طرح کے لوگوں نے دنیا میں تباہی مچائی ہے، ظلم کیا ہے،لوگ ابھی بھی سمجھتے ہیں کہ ہندوستان ایک سیکیولر ملک ہے، سب سے بڑا نقصان آخر میں ہندوستان کو ہوگا۔انہوں نے مزید کہا کہ آرٹیکل 370 ہمارا معاملہ تو تھا نہیں، یہ تو ہندوستان کا آئین تھا، یہ لوگ اپنے ہی سپریم کورٹ کیخلاف گئے، ملک جنگوں سے نہیں نظریے ختم ہونے سے ختم ہوتے ہیں، انہوں نے میڈیا پر کنٹرول کرلیا ہے، آر ایس ایس کے غنڈوں سےججز ڈرتے ہیں، ہٹلر کی جرمنی کے بیانیئے کیخلاف کوئی بات کرے تو اسے غدار کہا جاتا تھا۔وزیراعظم نے کہا کہ بھارت میں مسلمانوں کو دیوار سے لگائیں گے تو ردعمل تو آئے گا، آج سب کہہ رہے ہیں کہ دو قومی نظریہ بالکل ٹھیک تھا، آر ایس ایس کا جن آگے جائے گا، اب سکھوں، دلت پر

مشکل وقت آئے گا، یہ نظریہ نفرت سے بھرا ہوا ہے، یہ کشمیر کے بعد پاکستان آئے گی، ہمیں تمام تر انفارمیشن ہیں۔عمران خان نے کہاکہ فوج کو پوری طرح پتہ ہے کہ آزاد کشمیر میں بھی ایکشن کا پروگرام بنایا ہوا ہے، ان لوگوں نے زیادہ خوفناک پروگرام بنایا ہوا ہے، دنیا کی نظریں ہٹانے کیلئے انہوں نے آزاد کشمیر پر ایکشن لینا ہے، مودی کو پیغام دیتا ہوں ایکشن لیں، اینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے گا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی فوج 20 سال سے شہیدوں کی لاشیں اٹھارہی ہے، پاکستانی فوج اور قوم پوری طرح تیار ہے، مسلمان جنگ میں کبھی پہل نہیں کرتا ہے، لیکن اپنی آزادی کو بچانے کیلئے جو جنگ ہوتی ہے،اس میں شہید ہونےوالوں کا رتبہ پیغمبروں کے بعد سب سے بڑا ہوتا ہے، مسلمان اپنی سے بڑی بڑی فوجوں کو شکست دےچکے ہیں، ہم بھارت کامقابلہ کریں گے، آخر تک جائیں گے۔وزیراعظم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مودی کہتا ہے اب خوشحالی آجائے گی، کشمیریوں کو 11 دن سے بند کیا ہوا ہے، کیا تمام ذرائع ابلاغ بند کر کے ، فوج بھیج کر یہ کشمیریوں کو خوشحال بنا رہے ہیں، ان کے نظریے کے پیچھے تکبر ہےقوم پر جب بھی تباہی آتی ہے تو تکبر کےباعث

آتی ہے، ہٹلر اور نپولین کی فوجیں تکبر کےباعث تباہ ہوئیں۔عمران خان کا کہنا تھا کہ جنگ کبھی بھی مسئلے کا حل نہیں ہوتا، پاکستان پوری طرح تیار ہے، فوج اور قوم ایک پیج پر ہیں ،بھارت نے کسی بھی قسم کی خلاف ورزی کی تو ہم تیار ہیں، اگر جنگ ہوئی تو وہ ادارے ذمہ دار ہوں گے جن کا کام جنگیں روکنا تھا،یہ ہمارا نہیں ان اداروں کا ٹرائل ہے۔انہوں نے کہا کہ کیا یو این طاقتور کیخلاف نہیں چلتی، سوا ارب مسلمان اقوام متحدہ کی طرف دیکھ رہے ہیں،نریندر مودی نے اقوام متحدہ کی قراردادوں کو سائیڈ پر پھینک دیا، کل لندن میں تاریخی عوام کشمیر کیلئے باہر نکلے گی۔وزیراعظم عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ کرفیو کے اٹھنے کے بعد جو ظلم ہوا تو بین الاقوامی برادری ذمہ دار ہے، ان کے اندر تو نفرت بھری ہے، ان کا تو یہی مقصد ہے کہ پاکستان کو سبق سکھانا ہے، پاکستان نہ بنا ہوتا تو ہم سب فاشسٹ فلاسفی کے اندر غلامی کررہے ہوتے، آج کے روز قائد اعظم کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،کسی کو زبردستی مسلمان کرنا ہمارے دین کیخلاف ہے۔عمران خان نے مودی سرکار کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ مودی! کسی غلط فہمی میں نہ رہنا، ایسا نہیں کہ آپ نے قانون پاس کردیا تو

کشمیر ہاتھ کھڑے کردیں گے، کشمیری نڈر قوم ہیں،مودی تیار ہوجاؤ!وقت آگیا ہے تمہیں سبق سکھانے کا۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس