شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

بریکنگ نیوز: نیب کی عدالت میں شاہد خاقان عباسی کی پیشی ۔۔۔ سابق وزیراعظم کے حوالے سے بڑا حکم جاری کر دیا گیا


اسلام آباد(ویب ڈیسک) احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے ریمانڈ میں 14 روز کی توسیع کردی، انہیں 29 اگست کو دوبارہ عدالت میں پیش کیا جائے گا۔سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی عدالت میں پیش کیا گیا، جج محمد بشیر نے نیب پراسیکیوٹر سے استفسار کیا کہ مزید کتنا ریمانڈ چاہیے۔دوران

سماعت نیب نے مزید 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جسے عدالت نے منظور کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کو 29 اگست کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا۔اس موقع پر شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جتنا چاہتے ہیں ریمانڈ دے دیں، یہ دوران تفتیش دستاویزات مانگ لیتے ہیں، جو سوالات پوچھتے ہیں اس کا جواب دے دیتا ہوں۔جج محمد بشیر نے نیب پراسیکیوٹر کو ہدایت کی کہ 14 روز میں تفتیش مکمل کرنے کی کوشش کریں۔یاد رہے پاکستان کے سابق وزیراعظم اور رکن اسمبلی شاہد خاقان عباسی کو قومی احتساب بیوروکی ایک بارہ رکنی ٹیم نے لاہور میں گرفتار کیا تھا۔ان کی گرفتاری اربوں روپے مالیت کے مائع قدرتی گیس کے درآمدی ٹھیکے میں مبیّنہ بدعنوانیوں کے کیس میں عمل میں آئی تھی۔ واضح رہے کہ حکومت نے اپریل میں شاہد خاقان عباسی ، مفتاح اسماعیل اور اس کیس میں ماخوذ پانچ اور افراد کے بیرون ملک جانے پر پابندی عاید کردی تھی۔ان پر36 ارب 96 کروڑ روپے مالیت کے مائع قدرتی گیس کی درآمدی ٹھیکے میں قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔اس کے علاوہ واضح رہے کہ گزشتہ سال چیئرمین نیب جاوید اقبال کی زیر صدارت

ہونے والے اجلاس میں سابق وزرائے اعظم نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کے خلاف بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزامات کی تحقیقات کی منظوری دی گئی تھی۔نیب کے مطابق شاہد خاقان عباسی کے خلاف ایل این جی ٹرمینل کا ٹھیکہ قواعد و ضوابط کے خلاف دینے کے الزام میں تحقیقات شروع کی گئیں، شاہد خاقان نے من پسند کمپنی کو 15 سال کا ٹھیکہ خلاف ضابطہ دیا جس سے قومی خزانے کو مبینہ طور پر اربوں روپے کا نقصان پہنچا۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس