شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

بریکنگ نیوز : مفتاح اسماعیل کے حوالے سے سندھ ہائیکورٹ نے ناقابل یقین اعلان کر دیا


کراچی (نیوز ڈیسک ) سندھ ہائیکورٹ نے مفتاح اسماعیل اور عمران الحق کی 7 روز کے لئے حفاظتی ضمانت منظور کرلی۔ عدالت نے 5 لاکھ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دے دیا۔لیگی رہنما مفتاح اسماعیل نے حفاظتی ضمانت کیلئے دائر درخواست میں موقف اخیتار کیا کہ نیب تحقیقات کا سامنا کرنے کو تیار ہوں، نیب کارروائی بدنیتی پر مبنی ہے، گرفتاری کا خدشہ

ہے، حفاظتی ضمانت دی جائے۔ گزشتہ روز نیب حکام نے مفتاح اسماعیل کے گھر پر چھاپہ مارا تھا، مگر گرفتاری نہیں ہوسکی تھی۔مفتاح اسماعیل نے سندھ ہائی کورٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا شاہد خاقان جیسا مخلص انسان اس ملک کو پھر کبھی نہیں ملے گا، وہ شریف اور ایماندار شخص ہے، میرے گھر پر چھاپوں کی ضرورت نہیں تھی، مجھے جب بھی بلایا گیا میں نیب میں پیش ہوا، اب عدالت آیا ہوں، عدالت میں اپنی درخواست رکھوں گا، جو عدالت کا فیصلہ ہوگا میں تسلیم کروں گا۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ وزارت اطلاعات میڈیا کی معاونت سے عوام الناس تک صحیح معلومات پہنچانے اور منفی پروپیگنڈے کو بے نقاب کرنے میں اپنا کردار مزید مؤثر طریقے سے ادا کرے۔اے پی پی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم کی زیر صدارت وزات اطلاعات کا اجلاس منعقد ہوا جس میں معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان، سیکرٹری اطلاعات زاہدہ پروین، پرنسپل انفارمیشن آفیسر طاہر خوشنود اور وزارت کے دیگر سینئر افسران شریک تھے۔ڈاکٹر فردوس عاشق نے حکومتی ریفارم ایجنڈے کو عوام

میں اجاگر کرنے کیلئے وزارت اطلاعات کی جانب سے اٹھائے گئے مختلف اقدامات سے وزیر اعظم کو آگاہ کیا۔وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومتی اداروں میں سزا و جزا کی روایت کو مضبوط کرنا حکومتی اصلاحاتی ایجنڈے کا اہم جزو ہے۔انہوں نے ہدایت کی کہ وزارت اطلاعات کے مختلف شعبوں کو مزید متحرک کیا جائے تاکہ عوام تک معلومات بہم پہنچانے اور حکومتی ریفارمز ایجنڈے کو اجاگر کرنے کے عمل میں مزید بہتری لائی جاسکے۔عمران خان نے کہا کہ عوام کو حکومت کی پالیسیوں سے آگاہ کرنے اور ملک و قوم کے وسیع تر مفادات میں اٹھائے گئے اقدامات کو اجاگر کرنے میں وزارت اطلاعات کا کلیدی کرداروزیراعظم نے شرکا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت نے مشکل حالات میں حکومت کی باگ ڈور سنبھالی۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے معاشی استحکام اور ملک کے وسیع تر مفاد میں مشکل فیصلے کیے، گزشتہ 10 ماہ میں حکومت نے سماجی، معاشی و اقتصادی اور انتظامی شعبوں میں جو اصلاحات متعارف کرائی ہیں ماضی میں ان کی نظیر نہیں ملتی۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس