شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

جمعہ کا دن ارشد ملک پر بھی بھاری پڑ گیا


اسلام آباد (نیوزڈیسک) : جمعہ کا دن تاریخی فیصلوں کا دن بن گیا، پاکستان کی بڑی بڑی عدالتوں نے بڑے بڑے فیصلے جمعہ کے روز سنائے۔تاہم پاکستان مسلم لیگ ن کے لیے جمعے کا دن ہمیشہ بری خبر لایا ہے۔پچھلے کچھ عرصہ میں شریف خاندان کے خلاف جمعے کے روز جتنے بھی فیصلے آئے وہ ان کے حق میں نہیں تھے۔28جولائی 2018کو بھی

جمعہ کا روز تھا جب سپریم کورٹ نے ایک بڑا فیصلہ سنایا اور نواز شریف کو پانامہ اسیکنڈل میں نا اہل قرار دے دیا تھا۔8ستمبر 2017 کو جمعے کے روز ہی لاہور ہائیکورٹ نے ثقافتی ورثے کو بنیاد بنا کر اورنج لائن منصوبے پر پابندی لگائی تھی،15دسمبر 2017کو سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے حدیبیہ پیپرز ملز ریفرنس کھولنے کی نیب کی استدعا مسترد کر دی تھی۔ احتساب عدالت نے شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا محفوظ شدہ فیصلہ بھی 6جولائی بروز جمعہ کو سنایا تھا۔تاہم اس بارن جمعہ کا دن احتساب عدالت کے جج ارشد ملک پر بھاری پڑا۔ ویڈیو اسکینڈل کے بعد اسلام آباد ہائیکورٹ نے جج ارشد ملک کو عہدے سے ہٹانے کا فیصلہ کیا۔جس کے بعد ارشد ملک نے اپنے کیسز کی سماعت منسوخ کر دی اور نیب کورٹ سے چلے گئے۔جس پر ن لیگ کے حامیوں کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو جمعے کے دن اسی عدالت میں سزا سنانے والے ارشد ملک آج خود اس عدالت سے جا رہے ہیں۔یہاں تک کہ کچھ ن لیگ کے صارفین نے تو ارشد ملک کو جمعہ مبارک کہہ دیا۔ خیال رہے آج اسلام آباد ہائیکورٹ نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو عہدے سے ہٹانے کے لیے

وزارت قانون و انصاف کو خط لکھا ہے جس پر ن لیگ کا بھی ردِعمل سامنے آیا۔پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ جج کو ہٹانے کے بعد نواز شریفکے خلاف فیصلہ کی قانونی حیثیت بھی ختم ہو گئی.ان کا کہنا تھا کہ ثابت ہو گیا مریم نواز جو حقائق سامنے لائیں وہ درست ہیں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس