شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

وزیراعظم پاکستان کو دورہ روس کی دعوت نہیں دی گئی


اسلام آباد (نیوزڈیسک) : وزیراعظم عمران خان کو دورہ روس کی دعوت دئے جانے سے متعلق خبروں پر روس کی جانب سے وضاحت کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق روسی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ بظاہر وزیراعظم پاکستان عمران خان کو ایسٹرن اکنامک فورم میں شرکت کی دعوت نہیں دی گئی۔ یہ بیان گذشتہ ہفتے گردش

کرنے والی خبروں کے بعد سامنے آیا جس میں کہا گیا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے روسی صدر کی دعوت قبول کرلی اور وزیراعظم پاکستان عمران خان ستمبر میں روس کا دورہ کریں گے۔ اطلاعات کے مطابق روسی صدر ولادیمیر پیوٹن کی جانب سے دورہ روس کی دعوت بشکک میں ایس سی اوسمٹ کے دوران ملاقات میں دی گئی۔ روسی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ جنوبی ایشیا کے میڈیا میں گردش کرنے والی خبروں میں دعویٰ کیا گیا کہ وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان عمران خان کو ایسٹرن اکنامک فورم میں مہمان خصوصی کےطور پر مدعو کیا گیا۔ انہوں نے وضاحت کی کہ ایسٹرن اکنامک فورم کے اجلاس میں منگولیا کے صدر ، بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی، ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد اور جاپانی وزیراعظم شریک ہوں گے۔ مجموعی طور پر ایسٹرن اکنامک فورم میں ایک ملک کے صدر اور تین ممالک کے وزرائے اعظم شریک ہوں گے۔ 2015 ء میں شروع ہونے والے فورم کی میٹنگ کا مقصد روس کے دور دراز علاقے میں سرمایہ کاری کو فروغ دینا ہے۔ بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی اس فورم کے اجلاس میں

مہمان خصوصی کے طور پر شریک ہوں گے۔ خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے یہ خبر آئی تھی کہ وزیراعظم عمران خان کو روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے ایسٹرن اکنامک فورم میں شرکت کے لیے دورے کی دعوت دی جسے انہوں نے قبول کر لیا اور اس کے تحت وزیراعظم عمران خان ستمبر میں روس کا دورہ کریں گے تاہم اب روسی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں اس خبر کی تردید کر دی گئی ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس