شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

ورلڈ کپ، وہاب ریاض نے 36سال پرانا ریکارڈ توڑ دیا


ٹانٹن(نیوزڈیسک) پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان آج ہونے والے ورلڈ کپ کے میچ کے دوران پاکستان کی جانب سے نویں نمبر پر بیٹنگ کرتے ہوئے وہاب ریاض نے 45رنزکی شاندار اور یادگار اننگز کھیلی۔یہ ورلڈ کپ مقابلوں میں کسی بھی پاکستانی بیٹسمین کا اس نمبر پر سب سے بڑا سکور ہے۔اس سے قبل نویں نمبر پر یہ ریکارڈ پاکستان کے عالمی شہرت یافتہ

لیگ سپنر عبدالقادر کے پاس تھا جو کہ انھوں نے 1983 ءکے ورلڈ کپ کے دوران برمنگھم میں نیوزی لینڈ کے خلاف کھیلتے ہوئے 41رنز بناکر قائم کیا تھا۔ یاد رہے کہ ورلڈکپ 2019 ءکے سترہویں میچ میں دفاعی چیمپئن آسٹریلیا نے پاکستان کو41 رنز سے شکست دیدی ہے ۔ 308 رنز کے ہدف کے تعاقب میں اوپنرز اچھا آغاز نہ دے سکے اور فخر زمان بغیر کھاتہ کھولے پیٹ کمنز کی گیند پر رچرڈسن کو باؤنڈری لائن پر کیچ دے بیٹھے۔ فخرزمان کے آؤٹ ہونے کے بعد امام الحق کا ساتھ دینے کے لئے بابر اعظم میدان میں اترے اور دونوں بیٹسمینوں نے پراعتماد انداز میں اننگز کو آگے بڑھایا۔

56 کے سکور پر 7 دلکش چوکے لگانے والے بابر اعظم 30 رنز بناکر کولٹر نائل کا شکار بن گئے۔امام الحق نے عمدہ بیٹنگ کرتے ہوئے نصف سنچری مکمل کی، وہ 53 رنز کی اننگز کھیل کرآؤٹ ہوئے۔محمد حفیظ 46 رنز بناکر فنچ کی گیند پر سٹارک کو کیچ دے بیٹھے، اس وقت ٹیم کا مجموعی سکور 145 رنز تھا،ابھی سکور میں صرف ایک رن کا ہی اضافہ ہوا تھا کہ نئے آنےوالے بیٹسمین شعیب ملک بغیر کھاتہ کھولے کمنز کی گیند کی پر وکٹ کیپر کیری کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے،آصف علی بھی آسٹریلوی بولرز کا جم کر سامنا نہ کرسکے اور صرف تین رنز بناکر پویلین کی راہ لی۔
حسن نے دھواں دار بیٹنگ کرتے ہوئے 3 چھکوں اور 3 چوکوں کی مدد سے صرف 15 گیندوں پر 32 رنز بنائے، وہ زور دار چھکا لگانے کی کوشش میں رچرڈسن کی گیند پر عثمان خواجہ کو باؤنڈری لائن پر کیچ دے بیٹھے۔ وہاب ریاض نے کپتان سرفراز احمد کے ساتھ ملکر آٹھویں وکٹ کیلئے64رنز جوڑے جسکے بعد وہاب45رنز کی عمدہ بار کھیل کر سٹارک کے ہاتھوں پوویلین لوٹے،محمد عامر بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے، سرفراز احمد 40 رنز پر رن آ ؤ ٹ گئے اور یوں پوری ٹیم 266 رنز پر پویلین لوٹ گئی۔
اس سے قبل ٹانٹن میں کھیلے جارہے میچ میں پاکستان نے آسٹریلیا کےخلاف ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا، آسٹریلوی اوپنرز نے پاکستانی باؤلرز کےخلاف 146 رنز کا شاندار آغاز فراہم کیا،کپتان ایرون فنچ نے 82 رنز کی ذمہ دارانہ اننگز کھیلی، وہ محمد عامر کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔دوسرے آؤٹ ہونےوالے بیٹسمین سٹیو سمتھ تھے جو 10 رنز بناکر محمد حفیظ کی گیند پر آصف علی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔
نئے آنےوالے بیٹسمین گلین میکسویل زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور 10 گیندوں پر 20 رنز بناکر شاہین آفریدی کی گیند پر کلین بولڈ ہوگئے،اس دوران ڈیوڈ وارنز نے اپنی سنچری مکمل کی جو ایک روزہ بین الاقوامی میچوں میں ان کی 15 ویں سنچری ہے،وارنر 107 رنز بناکر شاہین آفریدی کی گیند پر امام الحق کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے، ان کی اننگز میں 11 چوکے اور ایک چھکا شامل تھا۔
عثمان خواجہ18اور شان مارش 23رنز بنا کر عامر کا شکار بنے،کورٹنائل محض2رنز بنا وہاب ریاض کی گیند پر پوویلین لوٹے،کمنز کی اننگز کا خاتمہ حسن علی نے2رنز پر کیا،عامر نے کیری کو آؤٹ کرکے اپنی چوتھی وکٹ حاصل کی ،پاکستانی بولرز نے آخری7اوورز میں صرف 19 رنز دےکر پانچ وکٹیں حاصل کیں اور دفاعی چیمپئن کو 307 رنز پر آؤٹ کر دیا۔ آسٹریلیا جانب سے ڈیوڈ وارنز 107 اور ایرون فنچ نے 82 رنز کی اننگز کھیلی جبکہ پاکستان کی جانب سے محمد عامر 30 رنز کے عوض 5 وکٹیں حاصل کیں۔ یہ عامر کے ون ڈے کیریئر میں پہلا موقع تھا جب انہوں نے 5 کھلاڑی آؤٹ کیے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس