شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

شہری ٹینکیاں بھروالیں ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی ، پچھلے ہی ہفتے قیمت بڑھنے کے بعد پیٹرولیم مصنوعات بارے ایک بار پھر تشویشناک خبر آگئی


اسلام آباد(نیوز ڈیسک)شہری ٹینکیاں بھروالیں ، پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی ، پچھلے ہی ہفتے قیمت بڑھنے کے بعد پیٹرولیم مصنوعات بارے ایک بار پھر تشویشناک خبر آگئی ۔۔۔ پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید اضافے کا امکان، عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت 70 ڈالر فی بیرل بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔ تفصیلات کے مطابق عالمی منڈی میں خام

تیل کی قیمت میں اضافہ ہوگیا اور خام تیل کی قیمت 5 ماہ کی بلند ترین سطح پر آگئی ہے۔ غیر ملکی خبر رساں اداروں کی جانب سے فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق اضافے کے بعد خام تیل کی قیمت 70 ڈالر 62 سینٹس فی بیرل ہوگئی ہے۔ایک روز کے دوران خام تیل کی قیمت میں 40 سینٹس کا اضافہ ہوا ہے۔ یہ اضافہ برینٹ خام تیل کی قیمت میں ہوا ہے۔ دوسری جانب امریکی خام تیل کی قیمت 63 ڈالر 48 سینٹس فی بیرل پر ٹریڈ کر رہی ہے۔ معاشی ماہرین کے مطابق خام تیل کی قیمت میں اضافے کی وجہ اوپیک کی پیداوار میں کمی کا اعلان ہے۔اوپیک نے خام تیل کی پیداوار میں 12 لاکھ بیرل یومیہ کمی کا اعلان کیا ہے۔اس سے قبل جنوری میں خام تیل کی قیمت بلند ترین سطح پر ریکارڈ کی گئی تھی۔ اوپیک ممالک کی جانب سے پیداوار میں کمی کے عندیہ کے بعد عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت 4.3 فیصد اضافے کے ساتھ 53 ڈالر 80 سینٹ فی بیرل ہوگئی تھی۔ جبکہ گزشتہ برس اکتوبر میں عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت 4 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی تھی اور خام تیل کی قیمت 85 ڈالر فی بیرل کے قریب جا پہنچی تھی۔بعد ازاں ایک ماہ بعد دسمبر میں خام تیل کی قیمت سال کی کم ترین

سطح پر آگئی تھی اور عالمی منڈی میں چوبیس گھنٹوں میں خام تیل ساڑھے تین ڈالر فی بیرل سستا ہوگیا تھا۔ لیکن اب پھر سے تیل کی پیداوار میں کمی کے باعث خام تیل کی قیمت بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ اس حوالے سے پاکستان کے ماہرین اقتصادیات کا کہنا ہے کہ یہ صورتحال پاکستان کیلئے بہت پریشان کن ہے۔ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت میں اضافے کے باعث پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہونے کا خدشہ ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس