شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

سابق صدرآصف زرداری کی گرفتاری سے قبل ڈیل ۔۔۔ بہت جلد ملکی سیاست میں کیا تبدیلیاں ہونے والی ہیں ؟معروف صحافی نے تہلکہ خیزانکشاف کرڈالا


کراچی(ویب ڈیسک)سینئر تجزیہ کار حسن نثار، مظہر عباس، امتیاز عالم، سلیم صافی، بابر ستار اور غلام مصطفی نےنجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری گرفتار ہوتے ہیں تو پیپلز پارٹی پر سے ان کا بوجھ ہٹ جائے گا، بلاول کو کھلا راستہ ملے گا اور لوگوں کی ہمدردیاں حاصل ہوں گی،وزیراعظم کا دورہ چین صرف پیسے

نہ ملنے پر ناکام کہنا درست نہیں ہے،پاکستان آئی ایم ایف کی کتنی شرائط مانے گا اس سے اندازہ ہوجائے گا کہ دورہ چین سے کتنی سپورٹ ملنے جا رہی ہے۔ میزبان ابصاء کومل کے سوال کہ آصف زرداری نے کہا ہے کہ مجھے گرفتار کیا گیا تو میری شہرت میں اضافہ ہو گا، کیا واقعی شہرت ملے گی؟ کا جواب دیتے ہوئے حسن نثار نے کہا کہ آصف زرداری کی شہرت میں اضافے کی گنجائش نہیں ہے، ویسے بھی شہرت اور بدنامی میں بہت باریک لائن ہوتی ہے، سیاہی کا ایک پرابلم ہوتا ہے کہ اس پر تہہ پر تہہ چڑھائی جائے لیکن کو ئی فرق نہیں پڑتا ہے۔امتیاز عالم کا کہنا تھا کہ آصف زرداری گرفتار ہوئے تو اس دفعہ شاید انہیں ہمدردی مل جائے، انکے خلاف کیسز کی طوطا مینا کہانی دو دہائیوں سے چل رہی ہے، کیس سیاسی وجوہات پر بنائے گئے ہیں۔مظہر عباس نے کہا کہ آصف زرداری جعلی اکاؤنٹس کیس میں مطمئن ہیں کہ کچھ نہیں نکلے گا۔سلیم صافی کا کہنا تھا کہ آصف زرداری ابھی تک ڈیل کی وجہ سے بچے ہوئے ہیں، زرداری پیپلز پارٹی کیلئے بوجھ ہیں وہ جیل جاتے ہیں تو پارٹی سے بوجھ ہٹ جائے گا، بلاول کو کھلا راستہ ملے گا جس کا پیپلز پارٹی کو فائدہ ہوگا،وہ جیل

جاتے ہیں تو انہیں ہمدردیاں مل جائیں گی۔غلام مصطفٰی نے کہا کہ جعلی بینک اکاؤنٹس کی ساری حقیقت سامنے آنی چاہئے، آصف زرداری جیل جاتے ہیں تو انہیں ایسی پذیرائی نہیں ملے گی جس سے پیپلز پارٹی کے ووٹ بینک میں اضافہ ہو۔ بابر ستار کا کہنا تھا کہ آصف زرداری کو جو نقصان پہنچنا تھا وہ پہنچ چکا ہے اب کچھ بھی کرلیں انہیں مزید نقصان نہیں پہنچے گا۔ایک اور سوال کہ وزیراعظم کا دورہ چین، کسی بھی امدادی پیکیج کا اعلان نہیں ہوا، تو کیا وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کامیابی کا دعویٰ غلط ہے؟ کا جواب دیتے ہوئے سلیم صافی نے کہا کہ اسد عمر کے متضاد اور غلط دعوے کیے گئے، عمران خان سی پیک پر نواز شریف کے نقش قدم پر ہی چل رہے ہیں۔حسن نثار کا کہنا تھا کہ یہ کہنا ڈپلومیسی کے اصولوں کیخلاف ہے کہ وزیراعظم کا دورئہ چین ناکام رہا ہے۔غلام مصطفی نے کہا کہ چین نے ماضی میں بھی کبھی پاکستان کو بیل آؤٹ پیکیج نہیں دیا ہے، اگر حکومت نے بیل آؤٹ پیکیج کا تاثر دیا تو غلطی کی ہے، وزیراعظم کا دورہ چین صرف پیسے نہ ملنے پر ناکام کہنا درست نہیں ہے۔امتیاز عالم کا کہنا تھا کہ دورے سے سی پیک پر چھائے بے یقینی کے بادل

چھٹ گئے ہیں، چین پاکستان کو براہ راست امداد دینے کے بجائے آئی ایم ایف کی ڈیمانڈ مینجمنٹ کو سپلائی سائڈ سے متوازن کرے گا۔ مظہر عباس نے کہا کہ کسی بھی بیرونی دورے کے نتائج چند ماہ بعد سامنے آتے ہیں، پاکستان آئی ایم ایف کی کتنی شرائط مانے گا اس سے اندازہ ہوجائے گا کہ دورئہ چین سے کتنی سپورٹ ملنے جارہی ہے، چین اور سعودی عرب کے دورے کبھی ناکام نہیں ہوتے ہیں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس