شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

درآمدات کی حوصلہ شکنی کیلئے 570مصنوعات کی درآمد پر پیشگی ریگولیٹری ڈیوٹی عائد


لاہور۔(نیوزڈیسک) معیشت کی عارضی گراوٹ اور دیگر امور کو مد نظر رکھتے ہوئے پیشگی اقدامات کے تحت 570مصنوعات کی درآمد پر ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کر دی گئی ہے جس سے ایک طرف تو درآمدات کی حوصلہ شکنی ہوگی جبکہ دوسری جانب کم سے کم20ارب روپے کا اضافی ریونیو حاصل ہو گا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ایف بی آ-ر نے ایک ماہ

قبل مراسلہ جاری کیا تھا جس کے بعد وفاقی کابینہ نے منظوری دی،مذکورہ مصنوعات میں پنیر،گاڑیاں‘موبائل فونز‘فروٹس اور سبزیاں شامل ہیں‘انہوں نے بتایا کہ20ارب روپے کا اضافی ریونیو حکومت اسی سال اکٹھا کریگی جو منی بجٹ کے ذریعے نافذ کئے گئی91ارب روپے کے نئے محصولات کا حصہ ہے‘ذرائع کے مطابق ایف بی آر کا 570ٹیرف لائنز کا ٹارگٹ ہے جو برآمدات میں کمی کے اقدامات اور بیرونی شعبہ پر دبائو کو کم کرنے کی کوشش کا حصہ ہے،اس سلسلہ میں ماضی دور حکومت کے دوران تمام اقدامات بے سود رہے ہیں اور مطلوبہ نتائج حاصل نہ ہونے کے باعث گزشتہ مالی سال کے دوران کرنٹ اکائونٹ خسارہ ریکارڈ 18ارب ڈالر تک پہنچ گیا تھا‘ذرائع نے مزید بتایا کہ570ٹیرف لائنز میں سے ایف بی آر نے پہلی مرتبہ 80آئٹمز پر ڈیوٹیز متعارف کروائی ہیں جن میں زندہ جانور‘گوشت‘مچھلی ‘انڈے ‘پیپر اور پیپر بورڈ‘موٹر سائیکلز‘سائیکلزجن پر 5سے 10فیصد ڈیوٹیز عائد کی جائینگی‘باقی جن آئٹمز پر ڈیوٹیز میں ایف بی آر نے نمایاں طور پر اضافہ کیا ہے ان میں سے کچھ آئٹمز میں فش فروزن اینڈ فش فلیٹس، پنیر‘فروٹس اورخشک فروٹس یعنی

گری میوے وغیرہ‘جوسز ،تمباکو اور موٹر کارز شامل ہیں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس