شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

بنگلا دیش کی سابق وزیر اعظم خالدہ ضیا کے بیٹے طارق رحمن کو وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد پر 2004ء کے گرینیڈ حملے کے الزام میں عمر قید کی سزا سنادی گئی


ڈھاکا۔ (نیوزڈیسک) بنگلا دیشی عدالت نے اپوزیشن جماعت بنگلا دیش نیشلسٹ پارٹی کے قائم مقام سربراہ اور سابق وزیر اعظم خالدہ ضیا کے بیٹے طارق رحمن کو 2004 ء میں ملک کی وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد پر ہونے والے گرینیڈ حملے کے الزام میں عمر قید کی سزا سنا دی گئی۔ اس حملے میں شیخ حسینہ واجد زخمی اور دیگر 20 افراد جاں بحق ہو گئے تھے جن

میں بنگلا دیش کے ایک سابق صدر کی اہلیہ بھی شامل تھیں۔ حملے میں ملوث ہونے کے الزام میں کل 49 افراد کے خلاف مقدمہ چلایا گیا جس کی سماعت مکمل ہونے پر طارق رحمنکو عمر قید اور ان کے دیگر 19 ساتھیوں جن میں دو سابق وزراء بھی شامل ہیں کو سزائے موت سنائی گئی ہے۔طارق رحمن2008ء میں بیرون ملک چلے جانے کے بعد سے اب تک لندن میں خود ساختہ جلاوطنی کی زندگی گزار رہے ہیں اور ان کو عمر قید کی سزا ان کی عدم موجودگی میں سنائی گئی۔ فیصلہ سنائے جانے کے وقت عدالت کے قرب و جوار میں سخت سکیورٹی انتظامات کئے گئے تھے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس