شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

ابو ظہبی:خاتون کو عشقیہ پیغاما ت بھیجنے والے کو قید کی سزا


ابو ظہبی(نیوزڈیسک) گزشتہ دِنوں عدالت نے ایک اماراتی نوجوان کو اپنی ہم وطن دوشیزہ کو واٹس ایپ نمبر پر رومانی پیغامات بھیجنے کے الزام میں تین ماہ قید کی سزا سُنائی تھی، اس کے علاوہ 20 ہزار اماراتی درہم کا جرمانہ بھی عائد کیا گیا تھا۔تاہم ملزم نے اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کر دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اُس کی سزا منسوخ کر دی جائے کیونکہ

اس کا مقصد خاتون کو پریشان یا ہراساں کرنا قطعاً نہیں تھا۔ عدالت میں سماعت کے دوران ملزم نے معافی مانگتے ہوئے کہا کہ وہ جرمانہ ادا کرنے کو تیار ہے اور دوبارہ خاتون کو کبھی پیغام بھیج کر پریشان نہیں کرے گا۔ عدالتی دستاویزات کے مطابق 25 سالہ نوجوان نے اپنی ہم عمر دوشیزہ کو واٹس ایپ کے ذریعے پیغامات بھیجنے شروع کر دیئے، جس میں درخواست کی گئی کہ وہ اُس کی محبت کو قبول کر لے، کیونکہ اُس کے لیے بس وہی موزوں ترین شخص ہے۔ لڑکی نے اُسے بارہا منع کیا کہ وہ اُسے رومانی پیغامات بھیجنے سے باز آ جائے، کیونکہ وہ ان پیغامات کو اپنے لیے توہین آمیز خیال کرتی ہے مگر ملزم اپنی حرکات سے باز نہ آیا۔ جس پر خاتون نے پولیس میں رپورٹ درج کروا دی ۔ عدالت میں مقدمے کی سماعت کے دوران استغاثہ کی جانب سے ملزم پر خاتون کو شر انگیز پیغامات بھیجنے اور سائبر کرائم قانون کی خلاف ورزی کے الزامات عائد کیے گئے۔ نوجوان نے فاضل جج کے رُوبرو خاتون کو واٹس ایپ پیغامات بھیجنے کا اعتراف کر لیا، تاہم اُس کا کہنا یہ تھا کہ یہ پیغامات مذاق کا رنگ لیے ہوئے تھے جن کا مقصد ابتداء میں دوستی کا تعلق قائم کرنا تھا جو

شاید مستقبل میں شادی میں بدل جاتے۔ اماراتی شخص نے کہا کہ اُس کا خاتون کی توہین و تضحیک کرنے کا قطعاً کوئی ارادہ نہیں تھا۔ خاتون کے وکیل نے ملزم سے مطالبہ کیا ہے کہ اُس کی مؤکلہ کو ذہنی اذیت پہنچانے کے عوض میں مخصوص رقم دی جائے۔ مقدمے کی اگلی سماعت 15 اکتوبر 2018ء تک ملتوی کر دی گئی ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس