شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

” عابد شیر علی نے میرے ڈیڑھ کروڑ خرچ کروا دیے ٹکٹ پھر بھی نہیں دیا گیا”۔۔۔ مسلم لیگ (ن) کی بہت بڑی شخصیت نے مستعفی ہونے کا اعلان کر ڈالا


لاہور (ویب ڈیسک) الیکشن میں صرف6دن باقی رہ گئے ہیں ،لیکن سیاسی جماعتیں ابھی تک ٹکٹ کے جھمیلوں سے نہیں باہر آسکیں ، مسلم لیگ (ن) کے ایک کے خواہشمند نے بھی سابق وزیر مملکت برائے پانی و بجلی عابد شیر علی پر سنگین الزام عائدکرتے ہوئے کہا ہے کہانورں نے ان کا ڈیڑھ کروڑ روپیہ خرچ کر وا دیا ۔ مسلم لیگ (ن) کے چیف آرگنائزر عشرت

بھلڑ نے ایک پریس کانفرنس کی ہے جس کے دوران انو ں نے کہا ہے کہ عابد شیر علی نے ٹکٹ کے نام پر میرے ڈیڑھ کروڑ روپے خرچ کروادیے ہیں۔ شریف برداران میری رقم مجھے واپس دلوائیں۔ انھوں نے اپنی چیف آرگنائزر کے عہدے سے مستعفی ہونے کا بھی اعلان کیا ۔ انھوں نے بتایا گیا کہ انھوں نے حافظ منیر کو 32لاکھ کی گاڑی لے کر دی ۔ جبکہ انھیں 30لاکھ روپے کا چیک بھی عابد شیر علی کو دینے کا کہاگیا ۔ یہاں تک کہ نوازشریف کی ریلی پر بھی انوبں نے دو لاکھ خرچ کیے لیکن انیںں پی پی 172کا ٹکٹ نہیں ملا اس لئے انوھں نے مطالبہ کیا کہ ان کی رقم واپس دلوائی جائے ۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق لاہور ہائیکورٹ نے بھکر سے نوانی برادران اور نذیر آرائیں کو الیکشن لڑنیکی اجازت دیدیجبکہ عابد شیر علی کے بھائی عمران شیر کو الیکشن لڑنے سے روک دیا۔ بدھ کو لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی نقوی کی سربراہی میں بنچ نے عمران شیر علی کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ٹربیونل نے ریٹرننگ افسر کا کاغذاتِ نامزدگی منظور کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دیا ہے، سوئی گیس کے بقایا جات

ادائیگی کے باوجود ٹربیونل نے حقائق کے برعکس کاغذات مسترد کیے۔عدالت نے اپیلٹ ٹربیونل کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے انہیں الیکشن لڑنے سے روک دیا۔ عمران شیر پی پی 117 فیصل آباد سے ن لیگ کے امیدوار ہیں۔لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شمس محمود مرزا کی سربراہی میں بینچ نے سعید اکبر نوانی اور رشید اکبر نوانی کی درخواستوں پر سماعت کی۔ درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ٹربیونل نے حقائق کے برعکس فیصلہ سناتے ہوئے الیکشن لڑنے سے روک دیا۔ الیکشن 2013ء میں جعلی ڈگری کی بنیاد پر نااہل قرار دیا گیا جبکہ جعلی ڈگری کیس میں ہائیکورٹ نے بری کردیا تھا، درخواست گزار آرٹیکل 62 کی زد میں نہیں آتے۔عدالت نے الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے دونوں بھائیوں کو الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی۔ دونوں بھائی بھکر کے حلقہ این اے 98، پی پی 90 اور 91 سے امیدوار ہیں





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس