شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

پیوٹن صدارت کے عہدے پر کیسے پہنچے ؟


‮اسلام آباد (ڈیلی آزادنیو زڈیسک )تاریخ پیدائش:7 اکتوبر1952،مقام پیدائش: لینین گراڈ(اس وقت پیٹرز بررگ) روس،پورا نام:ویلا ڈیمئر ویلاڈیمیروچ پیوٹن،والد کانام:ویلا ڈیمئر پیوٹن(ایک فیکٹری میں فورمین تھے)،والدہ کانام: ماریاپیوٹن،مطلقہ کانام: پیوڈ میلا پیوٹن(28 جولائی 1983 میں شادی اور2014 طلاق ہوئی)،بچوں کےنام: ییکاٹرینارماریا تعلیم:1975

میں لاؤ لینین گراڈ سٹیٹ یونیورسٹی سے 1984 میں ریڈ بینسر انسٹیٹیوٹ آف انٹیلی جنس،1997 مائننگ انسٹیٹیوٹ آف سینٹ پیٹرزبررگ مذہب: آرتھوڈکس عیسائی۔ دیگر حقائق: 1۔جوڈو میں بلیک بیلٹ کےحامل ہیں 2۔پیوٹن ایک عام سےرہائشی فلیٹ میں بڑے ہوئے جہاں ایک ساتھ3گھرانے رہتے تھے۔ 3۔سیاست کےمیدان میں آنے سےپہلے پیوٹن روسی انٹیلی جنس میں بھی کام کرچکے ہیں۔ عملی زندگی کاجائزہ: 1975: سویت یونین کےانٹیلی جنس ادارے میںبھرتی ہوئے۔ 1984:پیوٹن کوریڈ بینرانسٹیٹیوٹ میں پرھنے کےلیے منتخب کیا گیا،جہاں انہیں انگلش اورجرمن زبانوں پرعبور حاصل ہوئی۔ 1985:پیوٹن کو مشرقی جرمن میں جاسوسی کی روک تھام کےلیے مقررکیا گیا جو اس وقت امریکہ، برطانیہ اورفرانس وہاں کررہے تھے۔ 1990: پیوٹن لینین گراڈ یونیورسٹی میں شعبہ انٹرنیشنل آفیئرز کے ڈیئن بن جاتے ہیں۔ جون 1991: پیوٹن لینین گراڈ سٹی کونسل کےچیئرمین اناتولی سوپچینک کےمشیر بن جاتے ہیں۔ 1991-1994: پیوٹن سٹی کونسل میں شعبہ خارجہ امور کےچیئرمین بن جاتے ہیں۔ 1992: سویت یونین کےانٹیلی جنس ادارہ KGB کوخیر باد کہہ دیتےہیں۔ 1992-

1994:سینٹ پیٹرز بیرگ کے ڈپٹی میئر کےعہدے پرفائز رہے۔ 1994-1996:فرسٹ ڈپٹی چیئرمین آف سینٹ پیٹرز بررگ سٹی کونسل۔ 1997-1998: روسی صدر بوریس یلٹسن کےماتحت صدارتی ایڈمنسٹریشن اورکنٹرول ڈپارٹمنٹ کےچیئرمین رہے۔ جولائی 1998-اگست1999: چیف آف فیڈرل سکیورٹی سروس۔ مارچ 1999-اگست1999:سیکرٹری روسی سکیورٹی کونسل(زیرصدارت بوریس یلٹسن)۔ 9 اگست-31دسمبر1999:روسی وزیراعظم کےعہدے پرفائز رہے۔ 26مارچ 2000:بطور روسی صدر منتخب ہوئے۔ 24 مئی 2002: امریکی صدر جارچ ڈبلیو بش کےساتھ جوہری ہتھیاروں کی تعداد کم کرنے کےمعاہدے پر دستخط کرتے ہیں۔ 15 مارچ 2004:ایک بار پھر روسی صدر منتخب ہوتے ہیں۔ 27 اپریل 2005: اسرائیل کادورہ کرنےوالے پہلے روسی لیڈر بن جاتے ہیں۔ 5 اکتوبر 2005:برطانوی وزیراعظم ٹونی بلیئر ملاقات کرتے ہیں اور روس اوربرطانیہ کےدرمیان دہشت گردی کےخلاف باہمی تعاون کا اعلان کرتے ہیں۔ 19 دسمبر 2007: ٹائم میگزین نے پیوٹن کوسال کی شخصیت کےلقب سےنوازتی ہے۔ 2مارچ 2008: ڈیمٹری میڈویڈو روسی صدرمنتخب ہوتےہیں۔ 7 مئی 2008: صدارتی حلف اٹھانے کےٹھیک 2 گھنٹوں بعدمیڈویڈو پیوٹن کو روسی وزیراعظم نامزد کردیتے ہیں۔ 24 ستمبر 2011: صدرمیڈوویڈو حکمران جماعت سےمطالبہ کرتے ہیں کہ آئندہ انتخابات میں جیتنے کی صورت میں پیوٹن کوروسی صدر منتخب کیا جائے مقابلہ میں پیوٹن اعلان کرتےہیں کہ صدربننے کی صورت میں وہ میڈویڈو کو وزیراعظم نامزد کریں گے۔ 4مارچ 2012: پیوٹن تیسری مرتبہ ر وسی صدر منتخب ہوجاتے ہیں۔ 28دسمبر2012: پیوٹن ایک ایسے قانون پردستخط کردیتے ہیں جس کے تحت امریکی شہریوں پرروسی بچوں کو لےپالنے پرپابندی عائد کردی جاتی ہے۔ 6جون 2013: سرکاری ٹی وی پر پیوٹن اوران کے اہلیہ الیوڈ میلا علیحدگی کااعلان کرتے ہیں۔ 11ستمبر2013: پیوٹن امریکی صدر اوباما کاامریکہ کوغیرمعمولی کہنے پر شدید تنقید کانشانہ بناتے ہوئے کہتے ہیں امریکی صدر کا اپنے آپ اوراپنے ملک کی عوام اورامریکہ کوغیر معمولی قرار دینا خطرناک بات ہے ان کامزید کہتا تھا کہ خدانے سب کوبرابر بنایا ہے۔ 6 اگست2014:پیوٹن ایک ایسے قانون پردستخط کرتے ہیں جس کےتحت روس ان تمام ممالک سےغذائی مواد کی برآمدگی معطل کردےگاجو روس پراقتصادی پابندیاں عائد کرنے میں ملوث ہے۔ 21 نومبر 2014: پیوٹن کو کراٹے میں بلیک بلٹ سےنوازا جاتا ہے۔ 28 ستمبر 2015:پیوٹن اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کےاجلاس میں شرکت کرتے(دس سال کےوقفے کےبعد) اورامریکی صدر اوباما سےملاقات بھی کرتے ہیں۔ دونوں کےدرمیان شام اوریوکرین کےحوالے سےبات چیت ہوئی ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس