شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

سابق وزیراعظم کو زندگی کی سب سے بڑی خوشخبری مل گئی


اسلام آباد (ویب ڈیسک) سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 57 مری سے الیکشن لڑنے کی اجازت مل گئی۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل بینچ نے مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف درخواست پر سماعت کی۔چیف

جسٹس نے سماعت کے دوران وکیل درخواست گزار سے استفسار کیا کہ آپ کا کیس سے کیا تعلق ہے؟ کیا آپ مخالف امیدوار ہیں۔درخواست گزار کے وکیل نے جواب دیا کہ میں اس حلقے کا ووٹر ہوں، چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آپ نے عدالت کا وقت ضائع کیا۔سپریم کورٹ نے شاہد خاقان عباسی کی نا اہلی سے متعلق درخواست خارج کردی اور انہیں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 57 مری سے الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی۔خیال رہے کہ گزشتہ ماہ لاہور ہائی کورٹ نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو الیکشن ٹریبونل کی جانب سے نااہل قرار دیے جانے کا فیصلہ معطل کردیا تھا۔واضح رہے کہ 27 جون کو اپیلٹ ٹریبونل کے جج جسٹس عبد الرحمٰن لودھی نے این اے 57 سے شاہد خاقان عباسی کے کاغذات نامزدگی پر فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیراعظم کو نااہل قرار دیا تھا۔ جبکہ دوسری جانب سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کی آمد سے قبل لاہور اور اسلام آباد میں سیکیورٹی کے غیرمعمولی انتظامات کیے گئے ہیں جب کہ لاہور میں میٹرو بس سروس بھی معطل ہے اور شہر کےمختلف مقامات پر موبائل فون سروس بند کرنے کی سفارش کی

گئی ہے۔سابق وزیراعظم میاں نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کی ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا کے بعد وطنی واپسی کےموقع پر لاہور میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں ،جس کے تحت بیشتر مقامات کو کنٹینر لگا کربند کردیا ہے جب کہ پولیس کی جانب سے (ن) لیگ کے کارکنان کے خلاف بھی کریک ڈاؤن جاری ہے۔لاہور کی مختلف شاہراہوں پر بڑی تعداد میں کنٹینرز رکھ دیے گئے جب کہ شہر بھر میں سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری لاہور ایئر پورٹ پہنچ گئی جہاں شام سوا 6 بجے تک نواز شریف کی آمد متوقع ہے۔نوازشریف اور مریم نواز کی واپسی پر سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر لاہور کے مختلف مقامات پر موبائل فون سروس بند کیے جانے کا بھی امکان ہے۔پنجاب حکومت نے اس حوالے سے وزارت داخلہ کو خط لکھا ہے جس میں شہر کے 5 مقامات پر موبائل فون سروس معطل کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔پنجاب حکومت نے ائیرپورٹ، والڈ سٹی ایریا، شاہدرہ، ہڈیارہ اور نواب ٹاؤن میں موبائل فون سروس سہ پہر 3 سے رات 11 بجے تک معطل کرنے کی سفارش کی ہے۔چیف ٹریفک آفیسر (سی ٹی او) لیاقت علی ملک کا کہنا ہے کہ ٹریفک پلان پر ریلی سے قبل عمل درآمد کیا جائے گا اور ٹریفک کی روانی برقرار رکھنے کے لیے 200 سے زائد وارڈنز فرائض انجام دیں گے۔سی ٹی او کا مزید کہنا ہے کہ مسافروں کو ایئر پورٹ تک پہنچانے کے لیے شٹل سروس فراہم کی جائے گی اور ایئرپورٹ تک صرف فضائی مسافروں کو جانے کی اجازت ہوگی۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس