شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

اب اپنی پسندیدہ گاڑی صرف 3لاکھ روپے میں حاصل کریں ،گاڑیوں کی بھرمار،ہرماڈل کی مہنگی سے مہنگی گاڑی فروخت کے لیے دستیاب


کوئٹہ (ویب ڈیسک) بلوچستان کے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ سمیت صوبے کے بیشتر علاقوں میں اسمگل شدہ نان کسٹم پیڈ گاڑیاں بڑی تعداد میں موجود ہیں۔غیر قانونی طور پر سرحد پار سے لائی جانے والی گاڑیوں کو اندرون ملک بھی اسمگل کیا جاتا ہے۔ کسٹم حکام نے نان پیڈ گاڑیوں کے خلاف بھر پور کارروائی میں سینکڑوں گاڑیاں ضبط بھی کیں۔کوئٹہ

کے شو رومز میں سرعام نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کی خرید و فروخت کا کاروبار ان دنوں بھی عروج پر ہے۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق اندرون صوبہ سرحد پار سے اسمگل ہو کر لائی جانے والی گاڑیوں کا استعمال بھی جاری ہے۔ ان گاڑیوں میں تقریباً ہر ماڈل کی گاڑی موجود ہے۔ عام گاڑی 3 لاکھ روپے سے لے کر 15 لاکھ روپے کی قیمت پر بآسانی مل جاتی ہے۔ یہ گاڑیاں افغانستان سے براستہ قلعہ عبداللہ کے پہاڑی علاقوں سے لائی جاتی ہیں۔غیر رجسٹرڈ گاڑیاں فروخت کرنے اور ان کو چلانے والوں کا کہنا ہے کہ ماضی کی طرح اب بھی غیر قانونی طور پر لائی جانے والی گاڑیوں کے لئے حکومت کو ایمنسٹی اسیکم کا اعلان کرنا چاہئیے۔ اسمگل ہو کر آنے والی گاڑیوں کی روک تھام کے لئے کسٹم کا عملہ دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ مل کر مؤثر کارروائی میں مصروف ہے، کسٹم حکام کاکہنا ہے کہ وہ گاڑیوں سمیت ہر قسم کی اسمگلنگ روکنے کے لئے تمام ممکنہ اقدامات کر رہے ہیں۔ذرائع نے بتایا کہ نان کسٹم پیڈ گاڑیاں بڑی تعداد میں روزانہ کی بنیاد پر ملک کے دیگر حصوں تک گارنٹی کے ساتھ پہنچانے کا کاروبار بھی عروج پر ہے۔ تاہم اس ضمن میں کسٹم

حکام نے کارروائیوں کا آغاز کر رکھا ہے جن میں کئی اسمگل شدہ گاڑیوں کو ضبط بھی کیا گیا ہے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں اور کسٹم حکام کا کہنا ہے کہ گاڑیوں کی اسمگلنگ کی روک تھام کی ہر ممکن کوشش کی جا رہی ہے۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس