شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

عاصمہ جہانگیر کا جنازہ ابھی پڑھانا ممکن نہیں کیونکہ۔۔۔ عاصمہ جہانگیر کی تدفین کے حوالے سے انتہائی اہم خبر آگئی


لاہور(ویب ڈیسک)سپریم کورٹ بار کی سابق صدر اور معروف قانون دان عاصمہ جہانگیر کی نماز جنازہ 13 فروری منگل کو ادا کی جائے گی۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ بار کی سابق صدر اور معروف قانون دان عاصمہ جہانگیرکو آج صبح دل کا دورہ پڑا جس پر انہیں لاہور کے نجی ہسپتال منتقل کیا گیا۔لیکن وہ جانبر نہ ہو سکی۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق

معروف قانون دان عاصمہ جہانگیر نے سوگواران میں دو بیٹیاں اور ایک بیٹا چھوڑا ہے ،ان کی ایک بیٹی اسلام آباد اور دوسری بیٹی لندن میں مقیم ہیں ان کی وطنی واپس پر ہی تدفین کی جائے گی۔واضح رہے کہ لاہور ہائیکورٹ بار نے عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر 3 روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے جب کہ وکلا کل عدالتوں میں پیش نہیں ہوں گے۔صدر مملکت ممنون حسین نے قانون دان عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا اور کہا کہ قانون کی بالادستی اور جمہوریت کے استحکام کے لیے عاصمہ جہانگیر کا کردار ناقابل فراموش ہے۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے عاصمہ جہانگیر کی وفات پر کہا کہ بے زبانوں، بےسہاروں اور ظالموں کے ستائے ہوئے مظلوموں کی آواز آج خاموش ہو گئی۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عاصمہ جہانگیر نے آمریت کو ڈٹ کر للکارا، آج ملک ایک نڈر، بہادر اور اصول پسند شخصیت سے محروم ہو گیا۔چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے عاصمہ جہانگیر کے انتقال پر اظہار افسوس کیا اور ان کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا۔ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے اپنے تعزیتی بیان میں کہا کہ عاصمہ جہانگیر کی انسانی حقوق کےلئےجدوجہد ناقابل فراموش ہیں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس