شروع اللہ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا ہے ِ

مصطفیٰ کمال نے حکومت کے خاتمےکی پیش گوئی کردی


لاہور (ویب ڈیسک) پاک سر زمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن متاثرین چار سال سے انصاف مانگ رہے ہیں، مگر انھیں‌ انصاف نہیں‌ ملا، آج لاکھوں لوگ ان کا انصاف مانگنے یہاں‌ اکٹھے ہوئے ہیں.انھوں‌ نے ان خیالات کا اظہار مال روڈ پر طاہر القادری کے احتجاجی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا.مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ

ماڈل ٹاؤن کے شہدا کے خون کو سلام پیش کرتا ہوں، شہباز شریف اور رانا ثنااللہ کا استعفیٰ ضرور آئے گا، جب اللہ کی لاٹھی گھومے گی، حکمرانوں کے پاؤں کے نیچے زمین نکل جائے گی۔انھوں نے مزید کہا کہ آج کا اجتماع کسی سیاسی مقصد کے لیے نہیں، انسانی ہمدردی کے لئے ہے، افسوس ایک جمہوری معاشرے میں شہیدوں کوانصاف نہیں ملا۔پاک سر زمین پارٹی کے سربراہ نے حکومت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بدترین آمر بھی اس طرح کے سلوک سے شرما جائے گا، بدترین آمریت میں بھی ایسا غیرانسانی سلوک نہیں دیکھا.انھوں‌ نے مزید کہا کہ آج کے اجتماع کو محدود نہ کیجیے گا، کراچی والوں کی تکلیف پر بھی آپ کا دل دکھنا چاہیے، ملک میں ہرسال 53 ہزاربچے مر رہے ہیں، یہ بہت بڑا المیہ ہے، اس کے لیے بھی آواز اٹھائیں.قبل ازیں‌ احتجاجی جلسے سے طاہر القادری اور آصف علی زرداری نے خطاب کیا. سابق صدر کا کہنا تھا کہ میں نے کچھ ماہ پہلے ہی بتا دیا تھا کہ نواز شریف گریٹر پنجاب کا سوچ رہا ہے اور آج نواز شریف نے مجیب الرحمان بننے کا عندیہ دے کر میری بات کو سچ ثابت کر دیا ہے۔اس موقع پر علامہ طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ میرا مقصد

صرف دشمن سے پاکستان کو نجات دلانا ہے، آئین کے خلاف کوئی قدم اٹھایا نہ ہی ہم اٹھانا چاہتے ہیں، ہم تو آئین کی بحالی چاہتےہیں جس کی دشمن سلطنت شریفیہ ہے، ہم آئین نہیں سلطنت شریفیہ کوتوڑنا چاہتے ہیں۔





اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ ترین خبریں

دلچسپ و عجیب

بزنس